حکومت اور عدلیہ کا ٹکراﺅ خطرناک موڑ کی جانب بڑھ رہا ہے۔خورشید شاہ

Mian Nadeem میاں محمد ندیم پیر اپریل 16:10

حکومت اور عدلیہ کا ٹکراﺅ خطرناک موڑ کی جانب بڑھ رہا ہے۔خورشید شاہ
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔23 اپریل۔2018ء) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے کہا کہ حکومت اور عدلیہ کا ٹکراﺅ خطرناک موڑ کی جانب بڑھ رہا ہے۔ عدالت بولنا شروع کرے گی تو دوسروں کو موقع ملے گا۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ ہر وقت ہر جگہ یہی پیغام دیتا ہوں کہ اداروں کا ٹکراﺅ خطرناک ہے۔

ٹکراﺅ کسی پارٹی کی طرف سے یا کہیں اور سے خطرناک ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت اور عدلیہ کا ٹکراﺅ خطرناک موڑ کی جانب بڑھ رہا ہے‘نواز شریف کو ایسی باتیں نہیں کرنی چاہیئے۔ جب عدالت بولنا شروع کرے گی تو دوسروں کو موقع ملے گا۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے اس دن کے لیے ایسی قربانیاں نہیں دی تھیں۔

(جاری ہے)

ایسا نہ ہو اداروں کے ٹکراﺅ سے سسٹم ریزہ ریزہ ہوجائے۔

سندھ میں بجٹ پیش ہوگا، پختونخواہ نہیں دیتا تو جولائی کے اخراجات نہیں کر سکے گا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے حکومت سے کہا ہے کہ مینڈیٹ 4 ماہ کا ہے۔ حکومت پر دباﺅ ڈالیں گے 4 ماہ کے مینڈیٹ سے آگے نہ بڑھے‘حکومت صرف روز مرہ اخراجات کا بجٹ پیش کرے۔۔خورشید شاہ نے کہا کہ ملک میں دہشت گردی کے واقعات ہو رہے ہیں۔کسی سیاستدان پر حملہ ہوا تو الزام عدالت پر آجائے گا۔ عدالت کو سیکورٹی معاملے میں مداخلت نہیں کرنی چاہیئے۔انہوں نے کہا کہ بے نظیر بھٹو والا سانحہ ہوا کیونکہ مشرف نے سیکورٹی ہٹا دی تھی‘اسفند یار، فضل الرحمان پر حملے ہوئے، انہیں خدشات بھی ہیں۔