مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ سے متعددطلباء زخمی

بھارت کا رویہ تنازعہ کشمیر کے حل میںبنیادی رکاوٹ ہے،سید علی گیلانی

پیر اپریل 17:41

سرینگر ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے ضلع کٹھوعہ میں کم سن آصفہ کی بے حرمتی اور قتل کے خلاف احتجاج کرنے والے طلباء پر پیلٹ اور بلٹ فائر کرکے متعدد طلباء کو زخمی کردیا۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق اسلام آباد، شوپیان، پلوامہ ، بانڈی پورہ ، بارہمولہ اور گاندربل اضلاع میں آج سکول اور کالج کھلتے ہی طلباء سڑکوں پر آئے اور احتجاج کیا۔

اسلام آباد اور سوپور میں خاص کر طلباء اور بھارتی فورسز کے درمیان جھڑپیں ہوئیں ۔ شدید زخمی طلباء کو مقامی ہسپتالوں میں داخل کیا گیا۔ احتجاجی طلباء نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جن پرآصفہ کیلئے انصاف کی فراہمی کا مطالبہ درج تھا۔ گورنمنٹ ہائر سیکنڈری سکول کنگن کے طلباء نے ضلع گاندربل میں احتجاجی دھرنا دیا ور سرینگر لہہ شاہراہ کو کئی گھنٹوں تک بلاک کیا۔

(جاری ہے)

پیپلز فریڈم لیگ کے کارکنوں نے بھی سرینگر میں اس شرمناک واقعے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔دریں اثناء کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے حیدر پورہ سرینگر میں ایک سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیرپر بھارت کا ناجائز دعویٰ مذاکرات کے ذریعے تنازعہ کشمیر کے حل میں بنیادی رکاوٹ ہے۔ حریت چیئرمین نے کہا کہ وہ کبھی مذاکرات کے خلاف نہیں رہے ہیں لیکن مذاکرات بامعنی ہونے چاہیں اوراس کیلئے بھارت کو کشمیر کو ایک تنازعہ تسلیم کرناہوگا۔

سیمینار کا اہتمام عظیم مفکر ، فلسفی اور شاعر علامہ محمد اقبال کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے کیا گیا تھا۔ سینئر حریت رہنما اور تحریک حریت جموں وکشمیر کے چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے اپنے خطاب میں کہا کہ علامہ اقبال دنیا بھرکی تحاریک آزادی کے لیے مشعل راہ تھے۔ جموںو کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک نے اس موقع پر کہا کہ اقبال نے زندگی بھر بنیادی اصولوں پر سمجھوتہ نہیں کیا۔

حریت رہنمائوں محمد یوسف نقاش ،جاوید احمد میر اور مختار احمد وازہ پلوامہ میں بھارتی فوجیوں کی طرف سے مظاہرین پر فائرنگ میں زخمی ہونیوالے نوجوانوں کی عیادت کیلئے بون اینڈ جوائنٹس ہسپتال سرینگر گئے ۔۔میر واعظ عمر فاروق کی سرپرستی میں قائم فورم نے ایک بیان میں دختران ملت کی سربراہ آسیہ اندرابی کی گرفتار ی اور دیگر حریت رہنمائوں کی کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت نظربندی کو کٹھ پتلی انتظامیہ کی بوکھلاہٹ قراردیا۔

جماعت اسلامی مقبوضہ کشمیرنے بھی بھارتی پولیس کی طرف سے آسیہ اندرابی اور انکی ساتھیوں کی گرفتاری کی مذمت کی ہے ۔کل جماعتی حریت کانفرنس آزاد کشمیر شاخ کے کنوینر غلام محمد صفی کی اہلیہ آج اسلام آباد میں انتقال کرگئیں۔ تمام شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے انکی نماز جنازہ میں شرکت کی جو پولیس فائونڈیشن اسلام آباد میں ادا کی گئی ۔