آر پی او ملتان نے شجاع آباد تشدد واقعہ کا نوٹس، رپورٹ طلب کر لی ،انکوائری کمیٹی تشکیل دے دی

پیر اپریل 18:38

ملتان (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) آر پی او ملتان محمد ادریس احمد نے شجاع آباد تشدد واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کر لی اس سلسلے میں انکوائیری کمیٹی تشکیل دے دی.واضع رہے کہ گزشتہ روز ملتان کہ تحصیل شجاع ا?باد کے نواحی علاقہ رسول پور میں غیرت کے نام پر لڑکی کے باپ اور بھائیوں کا علاقے کے رہائشی نوجوان پر سرعام لاٹھیوں سے بیہمانہ تشدد لڑکے کی دونوں ٹانگیں توڑ کر سڑک پر پھینک دیا تھا. مقامی زمیندار اور اس کے بیٹوں نے اللہ دتہ کو غیرت کے نام پر اپنے ڈیرے پر بھینسوں کے طبیلے میں اس کے پاؤں رسیوں سے باندھ کر سر عام لاٹھیوں سے تشدد کیا۔

(جاری ہے)

زمیندار کے تشدد سے نوجوان کو بے ہوش ہو جانے پر گندا پانی پلا کر ہوش میں لاکر دوبارہ تشدد کا نشانہ بنایا جاتا رہا۔اللہ دتہ پر شدید تشدد کر کے اس کی دونوں ٹانگیں توڑ دی گئیں۔ نوجوان پر تشدد کے دوران اہل علاقہ زمیندار کے خوف سے اس کو چھڑوانے کی ہمت کسی نہ کرسکے۔ اللہ دتہ کو غفار اس کے بیٹے فرید اور حامد نے تشدد کر کے اس کی دونوں ٹانگیں ٹوٹنے اور بے ہوش ہونے کے بعد سٹرک پر پھینک دیا۔ اہل علاقہ نے متاثرہ نوجوان اللہ دتہ کو لودھراں کے نجی ہسپتال منتقل کردیا تھا

متعلقہ عنوان :