القدس کو اسرائیل کا دارالحکومت نہیں بننے دیا جائے گا، صدر محمود عباس

پیر اپریل 19:16

راملہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ نے القدس شریف پر امریکا کے فیصلے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ہم ٹرمپ یا کسی اورکو القدس شریف کو جابر اسرائیلیوں کا دارالحکومت تسلیم کرنے کی اجازت نہ دے کر اس فیصلے سے مقابلہ کریں گے۔

(جاری ہے)

غیر ملکی میڈیا کے مطابق محمود عباس نے راملہ شہر کے مغربی کنارے میں ایک طبی وفد کے ساتھ ملاقات کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ ہم کسی بھی ملک کو فلسطین کے تنازعات کے حل سے پہلے اپنے سفارتخانے کو القدس کی منتقلی کی اجازت نہیں دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ القدس فلسطین کا دارالحکومت ہے اور اس کے دروازے سب کیلئے کھلے ہیں اور تمام ادیان کے پیروکار اس میں آزادانہ عبادت کرسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ فلسطین کو ایک آزاد ریاست بنانے کا وقت آگیا ہے۔

متعلقہ عنوان :