آرمینیا ،حکومت مخالف مظاہرے،300 افرادگرفتار

حزب اختلاف کا وزیر اعظم سرج سارکیسیان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ

پیر اپریل 19:42

ڈیون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) آرمینیا میں حکومت مخالف مظاہروں میں شریک سینکڑوں افراد کوگرفتار کر لیا گیا، حزب اختلاف رہنما نکول پشیناناور ان کے حامی وزیر اعظم سرج سارکیسیان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق آرمینیا میں حکومت مخالف مظاہروں کے دوران سینکڑوں افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ آرمینیا کے دارالحکومت یریوان میں حکومت مخالف مظاہروں کے دوران300سے زائد افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔مقامی حکام نے بتایاہے کہ گرفتار ہونے والے ان افراد میں حزب اختلاف رہنما نکول پشینان بھی شامل ہیں جنہوں نے اس مظاہرے کی شروعات کروائی تھی۔۔پولیس نے ان مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ربڑ کی گولیاں بھی چلائیں۔خیال رہے کہ نکول اور ان کے حامی وزیر اعظم سرج سارکیسیان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

متعلقہ عنوان :