کٹکیر میں زیادتی کی شکار بچی کو مظفرآباد میں حفاظتی تحویل میں لینے کے احکامات جاری

پیر اپریل 20:51

مظفر آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) کٹکیر میں زیادتی کا شکار بچی کے والدین کی درخواست پر ڈپٹی کمشنر مظفرآباد نے فوری ایکشن لیتے ہوئے متاثرہ خاندان کو دارالحکومت مظفرآباد میں حفاظتی تحویل میں لینے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں ۔ پیر کے روز نور فاطمہ کے والد زبیر احمد نے سنٹرل پریس کلب میں آکر بتایا کہ زیادتی کے مرتکب نوجوان راجہ باسط کے خاندان کے افراد صلح صفائی پر زور دے رہے ہیں بصورت دیگر نتائج کی ذمہ داری کی دھمکیاں دے رہے ہیں جس پر سینئر صحافیوں لیاقت قیوم عباسی اور عبدالواجد خان نے مظلوم خاندان کی داد رسی کیلئے ڈپٹی کمشنر مسعود الرحمان سے ملاقات کی۔

متاثرہ خاندان نے ڈپٹی کمشنر کے سامنے بیان دیا کہ انہیں جان و مال کا تحفظ فوری طور پر فراہم کیا جائے ۔

(جاری ہے)

آبائی علاقے میں اب رہنا مشکل ہے جس پر ڈپٹی کمشنر نے سب ڈویژنل مجسٹریٹ مظفرآباد عاصم خالد اعوان کو تحریری طور پر ہدایت کی کہ متاثرہ خاندان کی مظفرآباد میں محفوظ رہائش گاہ اور فول پروف سیکیورٹی کا بندوبست کیا جائے اور متعلقہ ایس ایچ او کو بچی کے خاندان کے تحفظ کو یقینی بنانے کی ہدایت بھی جاری کی ۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنر نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مظلوم خاندان کی مکمل داد رسی کی جائے گی انصاف کے تقاضوں کو ہر صورت پورا کیا جائے گااور ذمہ دار شخص کو کسی صورت معافی نہیں ملے گی ۔قانون پر مکمل یقین رکھیں ۔نور فاطمہ صرف آپ کی بچی نہیں وہ ہم سب کی بچی ہے۔