اسرائیل پر شام سے حملہ ہوا تو بشارالاسد کو قیمت چکانا پڑے گی،صہیونی وزیر

شامی صدر ایران کو چھوٹ دے کر ملکی نظام اور اپنے وجود ہی کو خطرے سے دوچار کررہے ہیں،امریکی ٹی وی سے گفتگو

منگل اپریل 12:27

تل ابیب(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اپریل2018ء) اسرائیل کے ایک اعلیٰ عہدہ دار نے خبردار کیا ہے کہ اگر صہیونی ریاست پر شام سے ایران نے حملہ کیا تو اس کی قیمت بشارالاسد کو چکانا پڑے گی ۔

(جاری ہے)

اسرائیلی وزیر برائے انفر ااسٹرکچر ، انرجی اور آبی وسائل یو وال اسٹینٹز نے امریکی ٹی وی سے بات چیت میں کہاکہ اگرشامی صدر بشار اسد نے ایرانیوں یا کسی اور عنصر کو شام کی سرزمین سے اسرائیل پر حملے کی اجازت دی تو اس کے نتائج ان ہی کوبھگتنا پڑیں گے۔

اسرائیلی وزیر نے کہا کہ وہ(بشارالاسد) اپنے نظام اور اپنے وجود ہی کو خطرے سے دوچار کررہے ہیں۔انھوں نے کہا کہ شام میں جو کچھ ہورہا ہے،وہ اسرائیل کے مستقبل اور اس کی سکیورٹی کے لیے اہمیت کاحامل ہے۔انھوں نے امید ظاہر کی کہ معاملات اس حد تک خراب نہیں ہوں گے کہ ایک مکمل جنگ چھڑ جائے۔انھوں نے کہا کہ اسرائیل اپنی شمالی سرحد پر ایران کی فوجی موجودگی کو روکنے کے لیے پٴْرعزم ہے۔

متعلقہ عنوان :