مثبت اور پر امید سوچ کے حامل نوجوانوں برادریوں اور معاشروں میں تبدیلی لانے کا محرک ثابت ہو تے ہیں، ان کی تخلیقی صلاحیتوں کو امن کے قیام اور تنازعات کے حل کے لئے استعمال میں لایا جاسکتا ہے، وزیر اعظم کے یوتھ پروگرام سے اب تک 10 لاکھ نوجوان مستفید ہوچکے ہیں

اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ڈاکٹر ملیحہ لودھی کا’’ یوتھ، پیس اینڈ سیکیورٹی‘‘کے موضوع پر اجلاس سے خطاب

منگل اپریل 15:10

نیویارک۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اپریل2018ء) اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے کہا ہے کہ نوجوان افراد تنازعات کے پیدا ہونے سے بچائو اور ان کے خاتمے یا حل کے لئے طاقتور کردار ادا کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں، مثبت اور پر امید سوچ کے حامل یہ نوجوانوں برادریوں اور معاشروں میں تبدیلی لانے کا محرک ثابت ہو تے ہیں، ان کی ان تخلیقی صلاحیتوں کو امن کے قیام اور تنازعات کے حل کے لئے استعمال میں لایا جاسکتا ہے۔

ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے یہ بات اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے’’ یوتھ، پیس اینڈ سیکیورٹی‘‘کے موضوع پر ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے کہا کہ آج کے نوجوانوں کو ان کی تمام تر صلاحیتوں کے ساتھ چند بڑے چیلنجز کا بھی سامنا ہے جن میں سماجی ناہمواریاں، سیاسی اور معاشرتی منہائی،تعصبات اور موقعوں کی کمی شامل ہیں۔

(جاری ہے)

عسکری و دیرینہ تنازعات،انسانی المیوں اورغیر ملکی قبضوں سے یہی نوجوان سب سے زیادہ متاثر ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عالمی برادری ان نوجوانوں کے درد اور دکھ کو سمجھنے کے لئے ناامیدی اور مایوسی کے درمیان تعلق کو ختم کرے کیونکہ بعض اوقات کسی کے پاس زندہ رہنے کے لئے کچھ نہیں ہوسکتا اور کسی کے پاس مرنے کی وجہ ہو سکتی ہے، ہمیں نوجوانوں کو بدلے کی آگ یا اشتعال سے بچانے کے لئے بنیادی وجوہات کو تلاش کرنا ہوگا۔

ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے کہا کہ نوجوان افراد مسلح تنازعات، انسانی بحرانوں، غیر ملکی تسلط اور تصفیہ طلب میں سب سے زیادہ متاثر ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی حکومت انتہاپسندی کے تدارک کیلئے جامع منصوبہ بندی پر عمل درآمد کررہی ہے اور وہ نوجوانوں کو معاشرے کا بامقصد افراد بنانے کیلئے کام کررہی ہے۔ پاکستان کی مستقل مندوب نے کہا کہ اس حکمت عملی کے تحت تمام تر توجہ نوجوان افراد کو بااختیار بنانے پر مرکوز ہے اور انہیں بنیادی سطح پر فیصلہ سازی کے عمل میں شامل کیا جارہا ہے، اس طرح انہیں مستقبل میں پاکستان کے لیڈر بننے کیلئے مواقع دیئے جارہے ہیں۔

ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے کہا کہ وزیر اعظم کے یوتھ پروگرام سے اب تک 10 لاکھ نوجوان مستفید ہوچکے ہیں، اور انہیں اس پروگرام سے اعلی تعلیم ، ہنر اور روزگار تک رسائی ملی ہے۔