عالمی شہرت یافتہ ہاکی گول کیپر منصور احمد کی بھارت سے علاج میں مدد کی اپیل

انسانیت سب سے بڑھ کر ہے ،ْ مجھے بھارت کا ویزہ اور دیگر طبی مدد مل جائے تو شکرگزار ہوں گے ،ْ منصور احمد

منگل اپریل 18:19

عالمی شہرت یافتہ ہاکی گول کیپر منصور احمد کی بھارت سے علاج میں مدد کی ..
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اپریل2018ء) پاکستان ہاکی کے نامور گول کیپر منصور احمد نے بھارت سے علاج میں مدد کی اپیل کردی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق49 سالہ عالمی شہرت یافتہ گول کیپر کا دل صرف 20 فیصد کام کر رہا ہے ،ْان کے دل میں 7 اسٹنٹس ڈالے جا چکے ہیں ،ْ گردوں اور پھیپھڑوں نے بھی کام کرنا چھوڑ دیا ہے، ڈاکٹروں نے انہیں ہارٹ ٹرانسپلانٹ (دل کی پیوندکاری) کا مشورہ دے رکھا ہے۔

منصور احمد نے غیر ملکی میڈیا کو بتایا کہ میں نے 1989 میں اندرا گاندھی کپ اور دیگر مقابلوں میں انڈیا کو میدان میں ہرا کر بہت سے بھارتی شائقین کے دل توڑے ہوں گے تاہم اب مجھے ہارٹ ٹرانسپلانٹ کی ضرورت ہے جس کیلئے مجھے بھارتی حکومت کی مدد درکار ہے۔واضح رہے کہ دونوں پڑوسی ممالک کے کشیدہ تعلقات کے باوجود پاکستانی شہریوں کو طبی ویزے پر بھارت جانے کی اجازت ہے۔

(جاری ہے)

منصور احمد نے کہا کہ انسانیت سب سے بڑھ کر ہے اور اگر مجھے بھارت کا ویزہ اور دیگر طبی مدد مل جائے تو وہ شکرگزار ہوں گے۔ انہوںنے کہاکہ کھیل ان چند شعبوں میں سے ایک ہے، جو روایتی حریفوں کے مابین تعلقات میں بہتری لاسکتے ہیں اور ماضی میں ایسا کئی مرتبہ ہوچکا ہے۔واضح رہے کہ منصور احمد پاکستان کیلئے 338 انٹرنیشنل ہاکی میچز کھیل چکے ہیں ،ْ انہوں نے 1986 سے 2000 کے دوران اپنے کیریئر میں 3 اولمپکس اور کئی ہائی پروفائل ایونٹس میں پاکستان کی نمائندگی کی۔منصور احمد ہی وہ کھلاڑی ہیں، جنہوں نے 24 سال قبل پاکستان کو چوتھی مرتبہ ہاکی کا عالمی چمپئن بنایا تھا۔