ملک میںبر وقت انتخابات کو یقینی بنایا جائے ،اس حوالے سے پائے جانے والے شکوک و شبہات کا خاتمہ ہونا چاہئے ‘سراج الحق

انتخابات بروقت ہوں الیکشن میں ایک دن کی تاخیر بھی جمہوری عمل کیلئے خطرناک ہوسکتی ہے ،الیکشن سے قبل نگران حکومت غیر جانبدار ہونی چاہئے

منگل اپریل 21:23

ملک میںبر وقت انتخابات کو یقینی بنایا جائے ،اس حوالے سے پائے جانے والے ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اپریل2018ء) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ ملک میںبر وقت انتخابات کو یقینی بنایا جائے اور اس حوالے سے پائے جانے والے شکوک و شبہات کا خاتمہ ہونا چاہئے ، ملک میں آئین و قانون کی بالادستی کا عزم اور جمہوریت کے ساتھ چیف جسٹس کی کمٹمنٹ حوصلہ افزا اور قابل تحسین ہے ،اب ضرورت اس امر کی ہے کہ انتخابات بروقت ہوں الیکشن میں ایک دن کی تاخیر بھی جمہوری عمل کیلئے خطرناک ہوسکتی ہے ،،الیکشن سے قبل نگران حکومت غیر جانبدار ہونی چاہئے ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنی صدارت میں منصورہ میں ہونے والے اعلیٰ سطحی مشاورتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ ،نائب امراء حافظ محمد ادریس ،راشد نسیم ،،ڈاکٹر فرید احمد پراچہ ،اسد اللہ بھٹو ،پروفیسر محمد ابراہیم ،مرکزی ترجمان امیر العظیم ،ڈپٹی سیکرٹری جنرل اظہر اقبال حسن ،محمد اصغر ،امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخواہ سینیٹر مشتاق احمد خان اور خیبر پختونخواہ کے سینئر وزیر عنایت اللہ خان نے بھی شرکت کی۔

(جاری ہے)

سینیٹر سراج الحق نے ملک میں بڑھتی ہوئی لوڈ شیڈنگ اور لاقانونیت پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکمرانوں کے بلند و بانگ دعوئوں کے باوجود دیہاتوں میں اٹھارہ اٹھارہ گھنٹے اور شہروں میں دس سے بارہ گھنٹے تک ہونے والی لوڈ شیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن کردی ہے ۔ حکومت غربت اور مہنگائی سے عوام کو کوئی ریلیف نہیں دے سکی۔انہوں نے کہا کہ عوام کی معاشی حالت ابتر ہوچکی ہے جس نے عام آدمی کیلئے زندگی گزارنا دشوار کردیا ہے ۔

سینیٹر سراج الحق نے حکومت کی طرف سے ملک کے ایئر پورٹس کی نجکاری کے ارادہ پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت بڑے بڑے ایئر پورٹس کی نجکاری کیلئے باقاعدہ گاہک ڈھونڈ رہی ہے اور عمدا ًاور قصداًاداروں کو ناکام بنا کر انہیں مقامی اور بین الاقوامی ٹھیکیداروں کے حوالے کرنے کا ایک مستقل پروگرام رکھتی ہے جو کسی طرح بھی سیکورٹی کے لحاظ سے ٹھیک نہیں اور نہ ہی اس میں کوئی قومی مفاد ہے ۔

سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ الیکشن سے قبل ایک غیر جانبدار نگران حکومت کا قیام ناگزیر ہے ۔اس وقت تمام سیاسی جماعتوں کو بروقت انتخابات کے انعقاد پر متحدہوجاناچاہئے ۔۔چیف جسٹس کی طرف سے ملک میں آئین و قانون کی بالادستی اور جمہوریت کے استحکام کے عزم کو سراہتے ہوئے امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ اگر ملک سے کرپشن اورلاقانونیت کا خاتمہ ہوجائے تو نہ صرف ادارے مضبوط ہونگے بلکہ جمہوریت کو بھی فروغ ملے گا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ 2مئی کو اسلام آباد میں ہونے والے ایم ایم اے کے کنونشن میں بھرپور شرکت کی جائے گی۔