پاکپتن، خون کا عطیہ دینے سے انسان ہی انسان کی جان بچا سکتا ہے، حکیم لطف اللہ

منگل اپریل 21:53

پاکپتن۔24 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اپریل2018ء) ڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری حکیم لطف اللہ نے کہا ہے کہ خون کا عطیہ دینے سے انسان ہی انسان کی جان بچا سکتا ہے، قرآن مجید میں ارشاد ہوتا ہے کہ جس کسی نے ایک انسان کی جان بچائی گویا اس نے پوری انسانیت کو بچا لیا، عطیہ خون صدقہ جاریہ ہے، ہماری کوشش ہے کہ ہر گائوں اور وارڈ و محلہ کی سطح پر بلڈ ڈونر سوسائیٹیز قائم کریں تاکہ اس مسئلہ کا حل بآسانی مقامی سطح پر ہوسکے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے آبادی ٹبہ شیر کوٹ میں E بلڈ بنک پاکپتن کی بلڈ سوسائٹی کے قیام کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر بلڈ ڈونر سوسائٹی ٹبہ شیرکوٹ کیلئے چوہدری محمد عابدکو صدر، چوہدری ناصر علی کو نائب صدر جبکہ چوہدری محمد ندیم کو جنرل سیکرٹری منتخب کیا گیا ، نوجوانوں نے اس امر کا اعادہ کیا کہ ہم انشاء اللہ دکھی انسانیت کی خدمت کا مشن جاری رکھیں گے، جنرل سیکرٹری انجمن فلاح مریضاں پاکپتن ڈاکٹر شاہد مرتضیٰ چشتی نے کہا کہ خون کا عطیہ دینے والے کو کوئی نقصان نہیں ہوتا جبکہ وہ بے شمار بیماریوں کا شکار ہونے کے خطرات سے بچ جاتا ہے جیسے دل کے امراض، جلدی امراض موٹاپا وغیرہ اور یہ صدقہ جاریہ ہے۔

متعلقہ عنوان :