پاکستان سے عسکری تعاون میں مزید فروغ کے خواہاں ہیں، سربراہ روسی افواج

منگل اپریل 22:59

راوالپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اپریل2018ء) روس کے بری افواج کے سربراہ جنرل اولیگ سیلیوکوف نے پاکستان کو جغرافیائی لحاظ سے ایک اہم ملک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ روس موجودہ عسکری تعاون میں مزید فروغ کا خواہاں ہے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ((آئی ایس پی آر)) کے اعلامیے کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سرکاری دورے پر روس پہنچے اور روسی بری افواج کے سربراہ جنرل اولیگ سیلیوکوف سے کریملن پیلس میں ملاقات کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف کو استقبال گارڑ آف آنر پیش کیا گیا، دونوں ممالک کا قومی ترانہ بجایا گیا اور انھوں نے فوجیوں کے مقبرے پر پھول بھی چڑھائے۔روسی بری افواج کے سربراہ جنرل اولیگ نے دہشت گردی کے خلاف جنگ اور خطے کے امن و استحکام کے لیے پاکستانی کوششوں اور کامیابیوں کو سراہا۔

(جاری ہے)

روسی جنرل کا کہنا تھا کہ پاکستان جیو اسٹریٹجیکل لحاظ سے ایک اہم ملک ہے اور روس موجودہ دوطرفہ عسکری تعلقات کو فروغ دینے کا خواہاں ہے۔

آئی ایس پی آر کے اعلامیے کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے روسی فوجی سربراہ کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ پاکستان بھی دو طرفہ عسکری تعلقات کو بڑھانے کی خواہش رکھتا ہے۔آرمی چیف نے کہا کہ روس نے حال ہی میں خطے کے سنگین معاملات کے حل کے لیے ایک مثبت کردار ادا کیا ہے۔ اعلامیے کے مطابق انھوں نے کہا کہ پاکستان خطے سے تنازعات کے خاتمے کے لیے اپنی کوششوں کو جاری رکھے گا اور پاکستان خطے میں تقسیم کے بجائے اتحاد کا خواہاں ہے۔