بجلی کی قیمتوں میں1روپی86پیسے یونٹ کمی سے صنعتی شعبہ کو ریلیف ملے گا‘میاں خرم الیاس

فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میںبجلی کی قیمتوں میں کمی کا اطلاق مستقل بنیادوں پر کیا جائے،مہنگی بجلی مہنگی پیداوار کے باعث اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ اور برآمدات میں کمی سے تجارتی خسارہ بڑھ رہا ہے ‘سابق وائس چیئرمین لاہور ٹائون شپ انڈسٹریز ایسوسی ایشن

بدھ اپریل 13:54

بجلی کی قیمتوں میں1روپی86پیسے یونٹ کمی سے صنعتی شعبہ کو ریلیف ملے گا‘میاں ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) تاجر راہنما و سابق وائس چیئرمین لاہور ٹائون شپ انڈسٹریز ایسوسی ایشن میاں خرم الیاس نے نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی نیپرا کی جانب سے مارچ کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمتوں میں1روپی86پیسے فی یونٹ کمی کے فیصلہ کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے صنعتی شعبہ کو ریلیف ملے گا ،مہنگی بجلی کے باعث پیداوار ی لاگت بڑھنے سے مہنگی پیداوار کے باعث اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ سے بیرون ملک پاکستانی اشیاء کی مانگ میں کمی واقع ہوئی ہے جس کے باعث برآمدات میں تیزی سے کمی ہورہی ہے اور تجارتی خسارہ بڑھ رہا ہے ۔

ان خیالات کا اظہار انہوںنے صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔میاں خرم الیاس نے کہاکہ یہ امر خوش آئند ہے کہ سینٹرل پرچیزنگ کمیٹی نے بجلی کی قیمتوں میں44پیسے فی یونٹ اضافہ کی درخواست کی تھی جسے حکومت نے مسترد کرکے بجلی کی قیمتوں میں کمی کا فیصلہ کیا ہے انہوںنے کہا کہ بجلی کی قیمتوں میں کمی کا اطلاق مستقل بنیادوں پر کیا جائے اور صنعتی مقاصد کیلئے بجلی کی قیمتوں میں مزید کمی کی جائے تاکہ بجلی کی قیمتوں میں کمی سے پیداواری لاگت میں کمی ہوسکے اور ملکی برآمدات اور زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ ہو۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہا کہ بجلی کی قیمتوں میں کمی کیلئے پرائیویٹ پاور پلانٹ پر انحصار کم کیا جائے اور پن بجلی منصوبے شروع کیے جائیں کیونکہ تھرمل بجلی مہنگی جبکہ ہائیڈل بجلی سستی اور عوام اور صنعتکاروں کے مفاد میں ہے ۔