افغانستان میں امریکی حکمت عملی پر حامد کرزئی کی تنقید

بدھ اپریل 14:29

کابل۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) افغانستان کے سابق صدر حامد کرزئی نے کہا ہے کہ امریکی حکمت عملی نے افغانستان کو بڑی طاقتوں کے درمیان رقابت کے ایک میدان میں تبدیل کر دیا ہے۔

(جاری ہے)

ایرانی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق افغانستان کے سابق صدر حامد کرزئی نے کہا ہے کہ افغان عوام چاہتے ہیں کہ ان کا ملک، دنیا کی بڑی طاقتوں کے درمیان تعاون کے مرکز میں تبدیل ہو مگر امریکہ کی مبہم اور پیچیدہ حکمت عملی، اس بات کا باعث بنی ہے کہ افغانستان،، مغربی ملکوں کے درمیان رقابت کے میدان میں تبدیل ہو گیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ افغانستان کو دنیا کی بڑی طاقتوں کی حیثیت سے اپنے پڑوسی ملکوں منجملہ ایران،، چین،، بھارت اور روس کی مدد کی ضرورت ہے۔۔حامد کرزئی نے اس سے قبل بھی کہا تھا کہ امریکہ افغانستان میں 16ہزار فوجی رکھنے کے باوجود گذشتہ 17برسوں کے دوران صرف افغان عوام کے قتل عام کا باعث بنا ہے اور اس امریکا سے افغانستان کی سلامتی میں کوئی مدد نہیں ملی ہے۔