گندم کی سرکاری خریداری مہم کو جامع اور شفاف انداز میں مکمل کیا جائے،ڈپٹی کمشنر

بدھ اپریل 15:24

فیصل آباد۔25 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) ڈپٹی کمشنرفیصل ۱ٓباد سلمان غنی نے ہدایت کی ہے کہ گندم کی سرکاری خریداری مہم کو جامع اور شفاف انداز میں مکمل کیا جائے اور اس دوران کسی کاشتکار کی حق تلفی نہیں ہونی چاہیے۔انہوں نے یہ ہدایت ضلع کے مختلف علاقوں میں گندم کے خریداری مراکز پر کاشتکاروں کیلئے ضروری سہولیات کامعائنہ کرتے ہوئے جاری کی۔

ڈی ایف سی امان اللہ سومرو،اسسٹنٹ کمشنر جڑانوالہ شہریار عارف اور دیگر افسران بھی ان کے ہمراہ تھے۔ڈپٹی کمشنر تحصیل جڑانوالہ میں جھوک دتہ،روڈالہ،جڑانوالہ سٹی اور دیگر مراکز پر گئے اور وہاں موجود کسانوں سے ملاقات کی۔انہوں نے کہا کہ باردانہ کی تقسیم کے عمل کو آسان اور شفاف رکھنے کے لئے جامع اقدامات کئے گئے ہیں اور ہر حق دار کو یہ سہولت ملے گی۔

(جاری ہے)

انہوں نے یقین دلایا کہ گندم کی خریداری کے دوران کاشتکاروں کی سہولیات کا ہرممکن خیال رکھا جائے گا اور انہیں سنٹرزپرپورااحترام ملے گا۔کاشتکاروں کے مسائل سنتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے اسسٹنٹ کمشنر کو ہدایت کی کہ سنٹر کے نزدیکی بینک سے کاشتکاروں کو ادائیگیاں کی جائیں اور اس دوران انہیں مکمل تحفظ حاصل ہونا چاہیے۔ڈپٹی کمشنر نے سٹاف کو ہدایت کی کہ کاشتکار کی کسی بھی شکایت کا فوری طور پر موقع پر ہی ازالہ کیا جائے اور سنٹرز پر پینے کے ٹھنڈے پانی،،پنکھوں،آرام کے لئے سایہ دار جگہ پر کرسیوں کی موجودگی اوردیگر ضروری سہولیات کو ہمہ وقت برقرار رکھا جائے۔

انہوں نے باردانہ کے لئے موصول ہونے والی درخواستوں کی شفاف جانچ پڑتال کو بروقت مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے خبردار کیا کہ گندم کی خریداری مہم میں کسی قسم کی بدعنوانی کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ڈی ایف سی امان اللہ سومرو نے بتایا کہ حکومت پنجاب نے اس مہم کے دوران ضلع سے ایک لاکھ 49ہزار میٹرک ٹن گندم خریدنے کا ہدف مقرر کیا ہے جس کے لئے مکمل تیاری کے ساتھ 11خریداری سنٹرز کام کررہے ہیں۔