پاکستان اسٹیٹ آئل نے پورٹ قاسم اتھارٹی کی فیول کی تمام ضروریات کی فراہمی کے لیے معاہدہ کرلیا

بدھ اپریل 16:20

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) پاکستان کی صف اول کی آئل مارکیٹنگ کمپنی ، پاکستان اسٹیٹ آئل ( پی ایس او) نے فیول کی فراہمی کے لیے ایک اہم معاہدے کے ذریعے پورٹ قاسم اتھارٹی کے ساتھ اپنے کاروباری روابط مزید مستحکم کرلیے ہیں۔ اس معاہدے کے تحت پی ایس او اگلے تین سال کے دوران ’ایکشن پلس ڈیزل ( ایچ ایس ڈی) اور آلٹران پریمیئم (پی ایم جی) کی فراہمی کے ذریعے پورٹ قاسم اتھارٹی کی فیول کی تمام ضروریات پوری کرے گی۔

چوبیس گھنٹے فعال رہنے والا پورٹ قاسم اتھارٹی پاکستان کا دوسرا مصروف ترین پورٹ ہے جو ملک کی کل سمندری تجارتی ضروریات کا چالیس فیصدمہیا کرتا ہے ۔ پورٹ کی فیول ضروریات بہت زیادہ اور پیچیدہ ہیں ، جنھیں پی ایس او اس نئے معاہدے کے تحت پوری کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

(جاری ہے)

ڈپٹی جنرل مینیجر انڈسٹریل کنزیومر پی ایس او ، محمد کاشف صدیقی اور سیکریٹری پورٹ قاسم اتھارٹی سراج الدین چانڈیو نے معاہدے پر دستخط کیے۔

ڈپٹی مینیجنگ ڈائریکٹر پی ایس او جہانگیر علی شاہ، سینئر جنرل مینیجر پی ایس او شہریار عمر، جنرل مینیجرپی ایس او قاسم ظہیر ، ڈائریکٹر جنرل پورٹ قاسم اتھارٹی علیم شیخ، ڈائریکٹر اسٹور پورٹ قاسم اتھارٹی کرنل (ر) تنویر الدین فاروقی اور دونوں اداروں کے دیگر اعلیٰ عہدیداران نے معاہدے پر دستخط کی تقریب میں شرکت کی۔اس اشتراک سے پاکستان کی معاشی ترقی میں حصہ ڈالنے کے دونوں اداروں کے مشترکہ عزم کے حصول میں اہم پیش رفت حاصل ہوگی۔

پی ایس او بڑے کاروباری اداروں مثلاً پاکستان ریلوے ، پی آئی اے، ایس ای سی ایم سی ، او جی ڈی سی ایل اور اب پورٹ قاسم اتھارٹی کو فیول کی فراہمی کے طویل تجربے کی حامل ہے ۔ اپنے صارفین کو اعلیٰ معیار کے فیول اور لبریکنٹس کی فراہمی پی ایس او کے لیے فخرکا باعث ہے۔ پی ایس او کی جانب سے درآمد کیا جانے والا ہائی اسپیڈ ڈیزل پاکستان میں گندھک کی کم ترین مقدار ولا سب سے معیاری ایچ ایس ڈی ہے جو زہریلی گیسوں کے کم اخراج کی بدولت ماحولیاتی تحفظ میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ ملک کاسب سے شاندار اور جدید ترین لبریکینٹ مینوفیکچرنگ ٹرمینل ( ایل ایم ٹی ) بھی پی ایس او کا حصہ ہے ،جو اے پی آئی معیار ات کے عین مطابق اور سند یافتہ معیاری لبریکنٹس تیار کرتا ہے۔

متعلقہ عنوان :