اولیاء اللہ کے مزارات رشد و ہدایت کے مراکز ہیں ‘اولیاء کرام نے کفر و شرک کے اندھیروں میں خدا کی محبت اور اطاعت کے چراغ روشن کیے ‘ انکی زندگی کا ہر ورق علم و عمل کی روشنی سے عبارت ہے

ْسجادہ نشین و مہتمم جامعہ عثمانیہ غوثیہ رکن الاسلام صاحبزاہ پیر محمد ریاض اسد کی بات چیت

بدھ اپریل 19:59

میرپور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) سجادہ نشین و مہتمم جامعہ عثمانیہ غوثیہ رکن الاسلام صاحبزاہ پیر محمد ریاض اسد نے کہا ہے کہ اولیاء اللہ کے مزارات رشد و ہدایت کے مراکز ہیں ۔اولیاء کرام نے کفر و شرک کے اندھیروں میں خدا کی محبت اور اطاعت کے چراغ روشن کیے ۔ انکی زندگی کا ہر ورق علم و عمل کی روشنی سے عبارت ہے ۔ برصغیرمیںاسلام کی اشاعت میں بزرگان دین کی بہت محنت شامل ہے ۔

ولی اللہ کی تعلیمات پر عمل کرنے سے ہی ہم برائیوں اور پریشانیوں سے نجات حاصل کر سکتے ہیں۔ان خیالات اظہار انہوں نے گذشتہ روز حضرت داتا گنج بخشؒ کے مزار پر حاضری دینے کے بعد میرپور پہنچنے پر علماء کرام کے مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقعہ پر پرنسپل صاحبزادہ انضمام الحق جامی ، صاحبزادہ اکرام الحق صوبیدار(ر) حاجی صابر حسین سمیت دیگر بھی موجود تھے ۔

(جاری ہے)

صاحبزاہ پیر محمد ریاض اسد نے کہاحضر ت قبلہ پیرسائیں محمدرکن الدین ؒ سے لاکھوں لوگوں نے ان کی زندگی میں روحانی فیض حاصل کیا۔ اولیاء اللہ کی تعلیمات ہمارے لیے مشعل راہ ہیںوہ اللہ کے درویش تھے سازی زندگی زہدوتقوی میں بسر کی آزادکشمیر اور پاکستان بھر میں دینی مدارس اور مساجد قائم کر کے دین کی حقیقی معنوں میں خدمت کی جو رہتی دنیا تک یا درکھی جائے گی۔ اُنہوںنے کہا مدرسہ ہذا میں سینکڑوں طلباو طالبات دینی و دنیاوی تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔مرکزی ناظم اعلیٰ محمد اعظم چشتی کی خدمات پر فخر ہے ان کی انتھک محنت و کوششوں سے مدرسہ ہذا کے طلباء و طالبات سالانہ امتحانات میں نمایاں کامیابی حاصل کرتے ہیں اور اداہ ہذاکا انتظام و انصرام بھی انتہائی تسلی بخش ہیں۔

متعلقہ عنوان :