ضلعی اسمبلی لوئردیرکا اجلاس ،مختلف امور زیربحث آئے

بدھ اپریل 22:39

چکدرہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) ضلعی اسمبلی کے اجلاس کا تیسرا روز کنوینئر نائب ناظم عبدالرشید کے زیر صدارت شروع ہوا جس میں ضلعی ناظمین غلام حسین، اظہر تقویم، تازہ خان، مولانا عمران اور فضل قادر وغیرہ نے بحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ واٹر مینجمنٹ جوکام کررہے ہیں وہ مہنگا ہی. غلام حسین نے کہا کہ پانی کے نکاس کے سیمنٹ کے پائپ کی قیمت تین سو روپے ہے جبکہ وہ آٹھ سو روپے پر دیتے ہیں جس سے چار سو روپیہ زیادہ منافع کھاتے ہیں اور اکثر منصوبے پورے بھی نہیں کیے ہیں جسکے خلاف ہم قانونی اقدام کرینگے۔

اس موقع پر پی ایم ایل این کے اظہر تقویم نے کہا کہ صوبائی حکومت کی کارکردگی ٹھیک نہیں ہے۔ تازہ خان نے کہا کہ ضلعی ناظم اعلی انتہائی نرم رویہ رکھتے ہیں اور صداقت پر یقین رکھتے ہیں جس کی وجہ سے متعلقہ محکمے ٹھیک کام نہیں کرتے اور ان کے ساتھ سخت رویہ اختیار کرنا چاہئی. مولانا عمران نے کہا کہ جو ارگنائزیشن اچھا کام کرتا ہے اسے سراہنا چاہیے اور جو این جی او ٹھیک کام نہیں کرتا اس پر تنقید کرنی چاہیی. اس موقع پر حاجی فضل قادر ناظم نے کہا کہ تالاش ہائیر سکول کی عمارت ایک سال پہلے ڈیمالش کی گئی تھی لیکن ابھی تک اس پر کام شروع نہیں ہوا ہے اور جس نے یہ گرایا ہے اس کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ ماینز کا ٹینڈر نہیں کرنا چاہیے کیونکہ خو ڑ، ریت اور زمینیں لوگوں کی ملکیت ہے اور سیلابوں کی وجہ سے یہ ً زمینیں بھر چکی ہیں اور ہم کسی صورت مٹی، ریت اور بجری کے ٹینڈر نہیں مانتے۔

متعلقہ عنوان :