کاروباری ادارے کلائوڈ ڈیٹا کی سکیورٹی کیلئے زیادہ فکرمند ہیں، اوریکل

بدھ اپریل 22:49

کاروباری ادارے کلائوڈ ڈیٹا کی سکیورٹی کیلئے زیادہ فکرمند ہیں، اوریکل
کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) سرکاری اور نجی کاروباری اداروں پر کی گئی ایک حالیہ تحقیق کے مطابق ادارے اپنی اہم کاروباری تفصیلات کی سیکورٹی کے لیے پریشان ہیں اور یہ اسے محفوظ بنانے کے لیے کوشاں ہیں۔ اوریکل اور کے پی ایم جی کی یہ تحقیق ایشیا، یورپ اور لاطینی امریکا کے 450 اداروں کے آئی ٹی پروفیشنلز کے سروے کی مدد سے کی گئی۔

اوریکل اور کے پی ایم جی کلائوڈ تھریٹ رپورٹ 2018 کے مطابق 90 فیصد انفارمیشن سیکورٹی پروفیشنلز نے اپنے نصف سے زیادہ کلائوڈ ڈیٹا کو حساس قرار دیا۔ 97 فیصد پروفیشنلز نے اس کے لیے کلائوڈ اپ رُووًل پالیسیاں وضع کی ہیں۔ تقریباً 82 فیصد نے اپنی تشویش کا اظہار کیا کہ آیا ملازمین ان پالیسیوں پر عمل کررہے ہیں۔کلائوڈ بزنس گروپ اوریکل کے نائب صدر اکشے بھرگاوا نے کہا کہ کاروباری اور دیگر اداروں نے کلائوڈ کے استعمال کو بڑھایا ہے۔

(جاری ہے)

سیکورٹی کے روایتی طریقہ کار بڑھتے ہوئے صارفین، ایپلی کیشنز، ڈیٹا اور انفرااسٹرکچر کا موثر انتظام نہیں کرسکتے ہیں۔ زیادہ کلائوڈ سروسز کے لیے کلائوڈ سیکورٹی ضروری ہے تاکہ مربوط پالیسیوں پر عمل در آمد اور ان کو منتظم کیا جاسکے۔ یہ پالیسیاں ہائبرڈ اور ملٹی کلائوڈ انوائرمنٹ تک استعمال کی جاتی ہیں، جو ادارے زیادہ مشین لرننگ، آرٹی فیشل انٹیلی جنس اور منظم ہوتے ہیں وہ سیکورٹی خدشات کی فوری شناخت اور ان کا سدباب کرسکتے ہیں اور اپنے اثاثہ جات کو محفوظ بنا سکتے ہیں۔

متعلقہ عنوان :