شام کی مالی امداد کے لیے ہونے والی ڈونرز کانفرنس میں توقع سے کم امداد جمع ہوئی، مارک لوکاک

بدھ اپریل 23:02

اقوام متحدہ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) شام کی مالی امداد کے لیے ہونے والی ڈونرز کانفرنس میں توقع سے کم امداد جمع ہوئی ہے۔ برسلز میں منعقدہ ڈونرز کانفرنس میں منتظمین نے چھ بلین ڈالر جمع کرنے کی توقع ظاہر کی تھی۔

(جاری ہے)

گزشتہ روز 25 اپریل کو ہونے والی اس کانفرنس کے بعد اقوام متحدہ کے ریلیف ادارے کے سربراہ مارک لوکاک نے بتایا کہ شرکاء کی جانب سے تقریباً ساڑھے چار بلین ڈالر کے وعدے سامنے آئے ہیں۔

جرمن حکومت نے اس کانفرنس میں ایک بلین یورو دینے کا اعلان کیا۔ یورپی یونین کے مطابق وہ سالانہ امداد کے حجم کو برقرار رکھنے کے حق میں ہے۔ یونین کی جانب سے 560 ملین یورو کی امداد دی جاتی ہے۔ برطانیہ نے 280 ملین ڈالر دینے کا وعدہ دیا۔ انہوں نے مذید بتایا کہ سن 2018ء کے دوران شام کی مالی امداد کے سلسلے میں توقع سے کم امدادی وعدے سامنے آئے ہیں۔