ٹنڈوالہیار میں انٹر کے امتحانات کے دوران طالبات سے لئے گئے درجنوں قیمتی موبائل فون گم یا مبینہ طور پر غائب کردیئے جانے کا انکشاف

موبائل فون گم ہونے کے بعد طالبات کاسکول پرنسپل کے دفتر کے سامنے احتجاج ،موبائل فون واپس کرنے کا مطالبہ

بدھ اپریل 23:13

ٹنڈوالہ یار (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) گورنمنٹ گرلز ہائی اسکول ٹنڈوالہ یارمیں انٹر کے امتحانات کے دوران اسکول انتظامیہ اور تعلیمی بورڈ حیدرآباد مقرر کردا ٹیم ایکسٹرنل کے درمیان سرد جنگ انٹر اردو کے پیپر کے دوران طلبات سے لئے گئے درجنوں قیمتی موبائیل فون گم ہونے کا انکشاف موبائیل فون گم ہونے کے بعدطلبات کا اسکول کی پرنسپل کے دفتر کے سامنے احتجاج موبائیل فون واپس کرنے کا مطالبہ موبائیل فون پیپر کے دوران انٹرنل نے طلبات سے لیکر اپنے پاس جمع کئے جو تعلیمی بورڈ حیدرآباد کی مقرر کردا ایکسٹرنل لیکر چلی گئی پرنسپل کا میڈیا کو بیان واقع کی اطلاع ملتے ہی طلبات کے والدین اسکول پہنچ گئے اسکو ل انتظامیہ پر سخت برہمی کا اظہار تفصیلات کے مطابق حیدرآباد تعلیمی بورڈ زیر اہتما م فرسٹ ایئر اور انٹر کے امتحانات جاری ہے کہ انٹر اردو کے پیپر کے دوران اس وقت بدنضمی پیدا ہوگئی جب پیپر ختم ہونے کے بعد طلبات نے جمع کرائے گئے موبائیل واپس مانگے تو تقریبا 20سے زائد قیمتی موبائیل فون گم ہونے کا انکشاف ہوا اس موقع پر طلبات نے پرنسپل کے دفتر کے سامنے موبائیل گم پر احتجاج کیااحتجاج کے دوران طلبات نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے اپنے قیمتی موبائیل پیپر شروع ہونے سے پہلے کلاس میں موجود انٹرنل کو جمع کرادیئے تھے اور جب پیپر ختم ہوا ہم نے اپنے موبائیل واپس مانگے تو پتا چلا موبائیل فون کلاس فو ن سے گم ہوچکے ہیں انہوں نے کہا کہ ان موبائیل فون میں ہمارا پرسنل ڈیٹا ہے ہمیں ڈر ہے کہ ہمارا پرسنل ڈیٹا مس یوز نا ہوجائے ہم مطالبہ کرتے ہیں ہمیں ہمارے قیمتی موبائل واپس دلوائے جائے واقع کی اطلاع ملتے ہی طلبات کے والدین بھی اسکول پہنچ گئے اور اسکول انتظامیہ اور والدین کے درمیان تلخ کلامی دیکھنے میں آئی اور انہوں نے بھی اپنی بچیوں کے موبائیل واپس کرنے کا مطالبہ کیا اور اس میں ملوث افراد کے خلاف کاروائی کرنے کا بھی مطالبہ کیا رابطہ کرنے پر اسکول کی پرنسپل نے میڈیا کو بتایا کہ حیدرآباد تعلیمی بورڈ کی جانب سے مقرر کردا2 ایکسٹرنل نائیلہ سموں اور زیب نظامانی کا رویہ ہمارے ساتھ طلبات کے ساتھ صحیح نہیں تھا طلبات نے جو موبائیل کلاس میں جمع کرائے تھے وہ تمام موبائیل ایکسٹرنل اپنے ہمراہ لے گئی جس کے بعد ہم نے فوری طور پر کنٹرولر امتحانات سے بات کی اور پورے واقع کی تفصیلات بتائی جس کے بعد ہم نے دونوں نائیلہ سموں اور زیب نظامانی ایکسٹرنل کو ریلیف کردیا ۔

متعلقہ عنوان :