میرپور خاص بورڈ کے تحت انٹر کے سالانہ امتحانات میں اسسٹنٹ کمشنر سانگھڑ کا امتحانی مراکز کا دورہ

نقل کا مواد اور موبائل فون برآمد نقل کرنا اور کروانا اخلاقی اور قومی جرم ہے ،والدین سے اپیل ہے وہ کاپی کلچر کے خاتمے کیلئے اساتذہ سے تعاون کریں، ذوالفقار

بدھ اپریل 23:13

میرپورخاص (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 اپریل2018ء) میرپور خاص بورڈ کے تحت ہونے والے گیارہویں اور بارہویں کے سالانہ امتحانات میں اے سی سانگھڑ ذوالفقار علی ممین کا امتحانی سینٹروں کا اچانک دورہ نقل کا مواد اور موبائل فون برآمد نقل کرنا اور کروانا اخلاقی اور قومی جرم ہے والدین سے اپیل ہے کہ وہ کاپی کلچر کے خاتمے کے لئے اساتذہ سے تعاون کریں تفصیل کے مطابق میرپور خاص بورڈ کے تحت ہونے والے گیارہویں اور بارہویں کے سالانہ امتحانات میں اے سی سانگھڑ ذوالفقار علی ممین کا امتحانی سینٹروں کا اچانک دورہ نقل کا مواد اور موبائل فون برآمد اس موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے اے سی سانگھڑ ذوالفقار علی ممین نے کہا کہ ہم پوری کوشش کر رہے ہیں نقل کا مکمل خاتمہ کریں گذشتہ پچھلے سالوں کی نسبت اس سال کافی حد تک نقل پر کنٹرول کیا ہے اس سال امتحانی سینٹروں پر دورے کے دوران موبائل فون بہت کم تعداد میں ملے ہیں آہستہ آہستہ لوگوں میں شعور آرہا ہے کیوں کہ نقل کرنا اور کروانہ قومی اور اخلاقی جرم ہے والدین کو چاہیے کہ وہ نقل کی روک تھام کیلئے اساتذہ کے ساتھ تعاون کریں دوسری جانب میرپور خاص بورڈ کے کنٹرولر علیم خانزادہ نے کہا ہے کہ کیارہویں اور بارہویں کے سالانہ امتحانات سینٹروں میں میڈیا کو کوریج کرنے پر مکمل پابندی ہے اس پابندی کے تحت شوشل میڈیا واٹس اپ کے تحت نقل میں کافی اچھا کردار ادا کرنے میں سرفہرست ہے سانگھڑ بھر کے نوجوانوں نے کئی واٹس اپ گروپ بنائے جس کی وجہ سے نقل کرنے میں آسانی رہی گیارہویں اور بارہویں کے امتحانات میں واٹس ایپ کا سرعام استعمال میرپورخاص ایجوکیشن بورڈ کی باتیں صرف باتیں ہی رہی نقل کی روک تھام میں میرپورخاص بورڈ مکمل طور پر ناکام ہوگیاجبکہ سندھ حکومت کی جانب امتحانات کے دوران 144 قلم عائدکرنے کے باوجود امتحانات کے سینٹرز میں نقل عروج پر میرپورخاص بورڈ کی جانب سے میڈیا کوریج پر مکمل طور پابندی عائد کر دی گئی سانگھڑ کے تمام تر امتحانی سینٹرز میں میڈیا کوریج نہیں کرسکتا امتحانات مراکز میں کھلے عام موبائل فون کا استعمال جاری رہا اور سیکڑوں واٹس ایپ گروپ بن گئے بوٹی مافیا کے ساتھ ساتھ سینٹر انتظامیہ ملوث ہونے کا انکشاف بھی سامنے آیا۔

متعلقہ عنوان :