روہنگیا مسلمانوں کے خلاف مبینہ مظالم کی امریکی چھان بین جاری

مہاجر کیمپ میں 1000سے زائد روہنگیا مرد اور خواتین کے انٹرویو ریکارڈ کیے گئے ،دو امریکی اہلکار

جمعرات اپریل 12:18

واشنگٹن (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) امریکی حکومت ان الزامات کی تفصیلی چھان بین کر رہی ہے، جن میں بتایا گیا ہے کہ جنوب ایشیائی ملک میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف گھناؤنے جرائم سرزد ہوئے ہیں۔

(جاری ہے)

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق دو امریکی اہلکاروں نے کہا کہ ہمسایہ ملک، بنگلہ دیش میں قائم ایک مہاجر کیمپ میں 1000سے زائد روہنگیا مرد اور خواتین کے انٹرویو ریکارڈ کیے گئے ہیں جن میں اٴْنھوں نے میانمار کی فوج کے ہاتھوں ہلاکتوں، زنا، مار پیٹ اور دیگر ممکنہ جرائم کی تفصیل پیش کی ہے۔

مارچ اور اپریل میں، بین الاقوامی قانون، جرائم اور انصاف کے شعبہ جات کے ماہر تقریباً 20 تفتیش کاروں نے بنگلہ دیش میں قائم ایک مہاجر کیمپ میں انٹرویو کیے۔امریکی میڈیا نے جب امریکی محکمہ خارجہ سے اِس تفتیش کی تصدیق سے متعلق سوال کیا تو اہل کار نے بتایا کہ چھان بین درست سمت میں جاری ہے۔