سعودی عرب کے مشرقی صوبے میں خواتین کا گاڑی چلانے کا تجربہ

میری ڈارائیونگ میرا عزم کے نام سے فورم منعقد ،خواتین کو ڈرائیونگ اورسلامتی کو یقینی بنانے پر بریفنگ دی گئی

جمعرات اپریل 13:00

دمام(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) سعودی عرب کے مشرقی صوبے میں مقامی خواتین ٹریفک سیفٹی کے قواعد و ضوابط کے حوالے سے تربیتی پروگراموں اور آگاہی لیکچروں میں ذوق و شوق سے شریک ہو رہی ہیں۔عرب ٹی وی کے مطابق میری ڈارائیونگ میرا عزم کے نام سے منعقد فورم کے دوران سامنے آیا۔فورم کے دوران منعقد لیکچروں میں ٹریفک قوانین پر اور سب کی حفاظت اور سلامتی کو یقینی بنانے میں ان کی اہمیت پر روشنی ڈالی گئی۔

(جاری ہے)

اس دوران مشرقی صوبے کی خواتین شہریوں نے فرضی ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھ کر گاڑی چلانے کے عملی طریقہ کار کی جان کاری حاصل کی۔۔سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے ستمبر 2017ء میں سعودی خواتین کو گاڑی چلانے کی اجازت دینے کا اعلان کیا تھا۔ اس فرمان پر عمل درامد رواں سال یکم جون سے ہو گا۔مشرقی صوبے کے گورنر کی اہلیہ شہزادی عبیر بن فیصل نے مذکورہ فورم میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ الحمد للہ ہمیں سعودی خواتین پر پورا اعتماد ہے۔ وہ گھر کی ذمّے داریوں کی طرح ڈرائیونگ کی ذمّے داری اٹھانے کی بھی پوری قدرت رکھتی ہیں۔یکم جون کی تاریخ قریب آنے کے ساتھ ہی سعودی خواتین میں گاڑی چلانے کے حوالے سے خوشی کے جذبات میں اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔