فوڈ اتھارٹی اور تاجر تنظیموں کے رہنمائوں کے درمیان ملاقات تک جرمانے یا دکانیں سیل کرنے سے گریز کیا جائے، تاجر رہنما

جمعرات اپریل 13:15

فوڈ اتھارٹی اور تاجر تنظیموں کے رہنمائوں کے درمیان ملاقات تک جرمانے ..
ایبٹ آباد۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) آل ٹریڈرز فیڈریشن ایبٹ آباد کا کہنا ہے کہ فوڈ اتھارٹی اور تاجر تنظیموں کے صدور و جنرل سیکرٹریز کے درمیان ملاقات تک دکانداروں پر جرمانے یا دکانیں سیل کرنے سے گریز کیا جائے، تاجروں کے جرمانہ/جیل جانے پر قطعاً خوش نہیں ہیں، دکاندار صبح سے لیکر شام تک دکانوں میں بیٹھ کر حق حلال طریقہ سے اپنے بچوں کا پیٹ پالتے ہیں، امید کرتے ہیں کہ دکاندار بھی انسانی صحت کے عین مطابق اشیاء خوردونوش فروخت کریں گے۔

ان خیالات کا اظہار تاجر رہنمائوں نے اصلاحاتی کمیٹی آفس بمقام جناح روڈ دفتر میں منعقدہ ایک میٹنگ کے دوران کیا۔ میٹنگ میں دکانداروں کے مسائل پر تفصیلی بات چیت ہوئی اور کے پی فوڈ سیفٹی اتھارٹی کی بازاروں میں بیکرز، جنرل سٹور اور ہوٹل پر کارروائیوں کے حوالہ سے تبادلہ خیال کیا گیا۔

(جاری ہے)

اصلاحاتی کمیٹی کے ممبر تاجر رہنما چیئرمین واسا نعیم اعوان، زاہد میر اور لیاقت اعوان نے خصوصی طور پر میٹنگ میں شرکت کی۔

اجلاس میں طے پایا کہ آل ٹریڈ فیڈریشن کے زیراہتمام تمام بازاروں کے جنرل سیکرٹری اور صدور کی کے پی فوڈ اتھارٹی کے افسران کے مابین ایک کارنر میٹنگ کرائی جائے تاکہ تمام دکانداروں کو معلوم ہو سکے کہ کون کون سی اشیاء فروخت کرنا ممنوع ہے۔ اصلاحاتی کمیٹی کے ممبران نے کہا کہ آئندہ چند دنوں میں ایک اہم میٹنگ یہاں مقامی ہوٹل میں منعقد کی جائے گی۔

اصلاحتی کمیٹی کے ممبران نے پی کے فوڈ سیفٹی اتھارٹی سے اپیل کی کہ جب تک آپ اور آل ٹریڈرز فیڈریشن کے صدور، جنرل سیکرٹریز کے درمیان میٹنگ نہیں ہو جاتی اس وقت تک کسی دکاندار کے خلاف ایکشن نہ لیا جائے چونکہ ہم دکانداروں کی نمائدگی کرتے ہیں اور انہیں دکانداروں کو ہدایت کرتے ہیں کہ کوئی بھی دکاندار انسانی صحت کے مطابق اشیاء خوردونوش فروخت کریں۔