پبلک اکائونٹس کمیٹی کی ذیلی کمیٹی کا اجلاس

وفاقی دارالحکومت کے علاقہ پیر سوہاوہ میں واقع منال ریسٹورنٹ کی لیز معاہدہ میں بے ضابطگیوں کی تحقیقات ایف آئی اے سے کروا کر 8 مئی تک رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت ریسٹورنٹ کی لیز میں مزید توسیع نہیں کی جائے گی، یہ 2020 میں ختم ہو جائے گی، سی ڈی اے میں 2010ء اور 2011ء میں 19 پلاٹ فرضی ناموں پر الاٹ کئے گئے، ان میں سے 11 پلاٹ فراڈ کے ذریعے الاٹ ہوئے، سیکٹر ای الیون میں لیز معاہدہ کی خلاف وزری پر پانچوں سوسائٹیوں کا لے آئوٹ پلان اور این او سی منسوخ، ایک سوسائٹی نے ہائی کورٹ سے رجوع کر لیا ہے، سی ڈی اے حکام

جمعرات اپریل 16:40

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) پبلک اکائونٹس کمیٹی کی ذیلی کمیٹی نے وزارت داخلہ کو ہدایت کی ہے کہ وفاقی دارالحکومت کے علاقہ پیر سوہاوہ میں واقع منال ریسٹورنٹ کی لیز معاہدہ میں ہونے والی بے ضابطگیوں کی تحقیقات ایف آئی اے سے کروا کر 8 مئی تک رپورٹ پیش کی جائے جبکہ وفاقی ترقیاتی ادارہ (سی ڈی ای) کی طرف سے کمیٹی کو بتایا گیا کہ پی اے سی کی ہدایت کے مطابق منال ریسٹورنٹ کی لیز میں مزید توسیع نہیں کی جائے گی، یہ 2020 میں ختم ہو جائے گی۔

اجلاس جمعرات کو کمیٹی کے کنوینئر میاں عبدالمنان کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہائوس میں ہوا۔ اسلام آباد کے ریڈ زون میں گرینڈ حیات ہوٹل کی تعمیر کے معاملہ پر نیب حکام نے بتایا کہ چیئرمین نیب نے اس ہوٹل کی تعمیر کے حوالہ سے تحقیقات مئی کے پہلے ہفتہ تک مکمل کرنے کی ہدایت کی ہے۔

(جاری ہے)

کمیٹی کے کنوینئر میاں عبدالمنان نے کہا کہ پی اے سی کو 8 مئی تک یہ رپورٹ پیش کر دی جائے۔

سی ڈی اے میں 2010ء اور 2011ء میں فرضی ناموں پر 20 پلاٹوں کی الاٹمنٹ کے معاملہ پر سی ڈی اے حکام نے پی اے سی کو بتایا کہ 19 پلاٹ فرضی ناموں پر الاٹ کئے گئے تھے جن میں سے 11 پلاٹ فراڈ کے ذریعے الاٹ ہوئے۔ اس معاملہ میں ملوث سی ڈی اے کے عملہ کے خلاف محکمانہ کارروائی کی جا چکی ہے، پانچ پلاٹوں کی انکوائری کا معاملہ ایف آئی اے میں زیر التواء ہے۔

اجلاس کے دوران ایک متاثرہ بیوہ خاتون نے پی اے سی ذیلی کمیٹی سے درخواست کی کہ ان کا مسئلہ حل کرایا جائے۔ اس خاتون نے کہا کہ میں اپنے پلاٹ کی فیس پہلے ادا کر چکی ہوں اور اس پر اب میرا مکان ہے۔ میاں عبدالمنان نے ہدایت کی کہ انسانی ہمدردی کی بنیاد پر بیوہ خاتون کا پلاٹ بحال کیا جائے۔ منال ریسٹورنٹ کی لیز کے معاملہ کا جائزہ لیتے ہوئے سی ڈی اے حکام نے بتایا کہ کمیٹی نے گذشتہ اجلاس میں حکم دیا تھا کہ منال ریسٹورنٹ کی 2020ء کو ختم ہونے والی لیز میں توسیع نہ کی جائے۔

کمیٹی کی ہدایت پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے گا اور لیز 2030ء کی بجائے 2020ء میں ختم ہو جائے گی۔ میاں عبدالمنان نے کہا کہ معاملہ صرف لیز کا نہیں بلکہ لیز معاہدہ میں نکات کی خلاف ورزی کا ہے۔ منال ریسورنٹ والوں نے معاہدہ سے ہٹ کر اضافی اراضی پر کیسے تعمیرات کر لیں۔ وزارت داخلہ ایف آئی اے کے ذریعے معاہدہ کی خلاف ورزی کا جائزہ لے کر 8 مئی تک رپورٹ پیش کرے، اگر لیز معاہدہ کی خلاف ورزی ثابت ہو جائے تو پھر لیز خود بخود ختم ہو جاتی ہے۔

اسلام آباد کے سیکٹر ای الیون میں پانچ ہائوسنگ سوسائٹیوں کی طرف سے لیز معاہدہ کی خلاف وزری کے معاملہ پر سی ڈی اے حکام کی طرف سے کمیٹی کو بتایا گیا کہ پانچوں سوسائٹیوں کا لے آئوٹ پلان اور این او سی منسوخ کر دیا گیا ہے، ان میں سے ایک سوسائٹی نے ہائی کورٹ سے رجوع کر لیا ہے۔