مظفرآباد میں گیراجوں اور عام دکانوں کی بھرمار ‘سڑکوں پر گاڑیوں کی مرمت کی جانے لگی

جمعرات اپریل 21:28

مظفرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) آزادکشمیر کے دارلحکومت مظفرآباد میں گیراجوں اور عام دکانوں کی بھرمار جس میں گیراج مالکانوں کی تعداد زیادہ سڑکوں اور گلیوں میں گاڑیاں کھڑی کرکے ان کی مرمت کا کام کیا جاتا ہے جبکہ آس پاس مختلف اشیاء خوردونوش کی دکانوں سمیت بیکری اور ہوٹل بھی واقع ہے ان گاڑیوں کا گرد آلود دھوا بھی ہوا کے زریعے ان خوردونوش کی اشیاء سمیت ہوٹلوں کے کھانے پینے والی اشیاء میں میکس ہوکر جو مضر صحت ثابت ہوسکتا ہے جبکہ ضلعی انتظامیہ یا محکمہ صحت عامہ نے اپنے گرم اور ٹھنڈے دفاتروں میں ماہوار تنخواہیں لینے پر اتفاق کر رکھا ہے عوام یا ایسے مقامات کا جائزہ یا چیکنگ نہیں کی جہاں سے روزمرہ کی کھانے پینے کی اشیاء میں شامل ہونے والی مختلف گیسیں ، چھوٹے چھوٹے بچے اور عام آدمی کھا کر ہسپتالوں میں پہنچنے شروع ہوگئے جبکہ چہلہ بانڈی، چہلہ پل ، قلعہ ، لوئر پلیٹ ، لاہوری ہوٹل سمیت دیگر مقامات پر جہاں ، مختلف مکینکوں کی دکانوں کے ساتھ ساتھ عام سپر مارکیٹ ، ہوٹل ، چائے شاپس ، پکوڑے سموسے سمیت دیگر اشیاء تیار کی جاتی ہیں وہاں کٹھارا اور پرانی گاڑیوں کے انجنوں اور ان کے سپرے کرنے والے مواد ہوا کی بنسبت دائیں بائیں ان اشیاء میں مکس ہوکر مضر صحت بن سکتا ہے جبکہ ضلعی انتظامیہ ، گیراجوں کو شہر سے الگ محفوظ مقام پر منتقل کریں جن کا شہر کی خدود میں کوئی مداخلت نہ ہو جہاں سپر مارکیٹیں اور ان کے آگے پارکنگ کی جگہ ہونی چاہئے محکمہ صحت عامہ میونسپل کارپوریشن مظفرآبا د ان تمام اشیاء کی باریکی سے چیکنگ کرکے ایسے روزمرہ کی اشیاء بنانے والے ہوٹل اور دکانوں ، بیکریوں کو اجازت دیں جو کہ انسان کی استعمال سے کوئی برے اثرات مراتب نہ ہوں۔

متعلقہ عنوان :