5.8 فیصد کی شرح نمو گزشتہ 13 برسوں میں بلند ترین اور 3.8 فیصد افراط زر کی شرح کم ترین رہی ہے،

محصولات کی وصولی پیپلزپارٹی کے دور میں 1946 ارب روپے تھی جو رواں مالی سال میں 3900 ارب سے زائد رہے گی، مفتاح اسماعیل

جمعرات اپریل 22:06

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) وزیراعظم کے مشیر برائے خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے گزشتہ پانچ سال کے دوران شاندار اقتصادی کارکردگی کا مظاہرہ کیا، رواں مالی سال کے دوران شرح نمو 5.8 فیصد رہی جو گزشتہ 13 سال میں بلند ترین سطح پر اور افراط زر کی شرح 3.8 فیصد تک کم ہو گئی جو اسی عرصے کی کم ترین شرح ہے۔

(جاری ہے)

جمعرات کو پریس کانفرنس کے دوران اقتصادی سروے 2017-18ء پیش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افراط زر پر قابو پایا اور خسارے میں کمی لائی گئی، رواں مالی سال کے دوران 5.79 فیصد کی شرح نمو گزشتہ 13 سال میں بلند ترین سطح پر ہے جبکہ افراط زر کی شرح 3.8 فیصد رہی جو گزشتہ 13 میں کم ترین سطح پر ہے جو مالی سال کے آخر تک 4.5 فیصد تک رہنے کا امکان ہے۔ انہوں نے کہا کہ زرعی شعبے میں بہتری کی شرح 3.8 فیصد رہی، افراط زر کی شرح گزشتہ تیرہ سال کی کم ترین سطح پر ہے جو 7.89 فیصد سے کم ہو کر 3.8 فیصد رہی۔ انہوں نے کہا کہ محصولات کی وصولی پیپلزپارٹی کے دور میں 1946 ارب روپے تھی جو رواں مالی سال میں 3900 ارب سے زائد رہے گی۔

متعلقہ عنوان :