پولیو سے نجات کے لئے زندگی کے تمام شعبوں سے وابستہ افراد کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ،ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرجنرل خضدارعلی رضاکھوسہ

جمعرات اپریل 22:07

کوئٹہ۔ 26 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) خضدارڈسٹرکٹ ٹاسک فورس برائے انسداد پولیو مہم کا اجلاس زیر صدارت ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرجنرل خضدارعلی رضاکھوسہ منعقد ہوا علی رضا کھوسہ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پولیو ایک مہلک اور موذی مرض ہے جس سے نجات کے لیئے زندگی کے تمام شعبوں سے وابستہ افراد کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا انہوں نے کہا کہ زندگی بھر معذوری سے اپنے نو نہالوں کو محفوظ رکھنے کے لیئے والدین اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے ضرور پلوائیں تاکہ پولیو جیسی موذی مرض سے ہمیشہ کے لیئے نجات حاصل کی جائے انہوں نے کہا کہ پوجیسے مرض سے نجات حاصل کرنے کے لیئے تمام طبقات کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ۔

(جاری ہے)

اجلاس میں ڈپٹی ڈسٹرکٹ اآفیسر محکمہ صحت ڈاکٹر فضل زہری،اسسٹنٹ کمشنر وڈھ امام بگٹی،اسسٹنٹ کمشنر نال اقبال احمد کھوسہ،چیف اآفیسر میونسپل کارپوریشن خضدار نذر خان زہر محمد خان زہری پروفیسر غلام مصطفی،محمد صدیق مینگل،میر ظفر زہری،ڈی ایس پی عبدالستار،سمیت دیگر مختلف محکموں کے سربراہان نے شرکت کی اور اجلاس کو 7مئی سے شروع ہونے والا سہ روزہ پولیو مہم کے تیاریوں کے حوالے سے بریفنگ دی گئی ڈاکٹر شفیع دانش نے اجلاس کو بتا یا کہ ایک لاکھ باون ہزار سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلوانے کا ہدف مقرر ہے اس سے قبل بھی ہم نے اپنا ہدف پورا کرلیا تھا اس بار بھی ہم پر عزم ہیں کہ اپنے ہدف کو مکمل کرینگے انہوں نے بتا یا کہ انسداد پولیو مہم کے حوالے سے تمام تر تیاریوں کا جائزہ لیا جا رہا ہے مقررہ تاریخ سے قبل ہم اپنی تیاریاں مکمل کرینگے علاوہ ازیں اجلاس کو درپیش مسائل و مشکلات سے آگاہ کیا اور ان کے حل کے لئے تجاویز پیش کئے ڈپٹی کمشنر نے انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ پولیو ہمارے نونہالوں کا دشمن ہے اس موذی مرض کے مکمل خاتمے کے لئے علماء کرام قبائلی عمائدین بلدیاتی نمائندے سمیت سب کو مل کر اس موذی مرض کے خلاف جہاد کرنا ہوگا ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر علی رضا کھوسہ نے کہا کہ اس موذی مرض سے چھٹکارا محض حکومت کا کام نہیں بلکہ اس مرض کو مکمل ختم کرنے کے لئے تمام طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والوں پر بھی بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔