ملکی خوشحالی ز راعت کی ترقی میں پنہاں ہے، ڈپٹی ڈائریکٹر ان سروس ٹریننگ اکیڈمی میر حسن

جمعرات اپریل 22:09

کوئٹہ۔ 26 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) ڈپٹی ڈائریکٹر ان سروس ٹریننگ اکیڈمی بلوچستان میر حسن نے کہا ہے ملکی خوشحالی ز راعت کی ترقی میں پنہاں ہے اگر زراعت کا شعبہ ترقی کرے گا تو ملک خوشحال ہوگا انہو ں نے کہا کہ قدرت نے بلوچستان کو معدنی دولت سے نوازنے کے علاوہ خوبصورت اور دل کش ماحول بھی فراہم کیا ہے قلات ڈویژن اور خصوصا خضدار میں موسم معتدل ہونے کی وجہ سے یہاں ذرعی ترقی کے بیش بہا مواقع موجود ہیں ہماری فصلیں ملکی سطح پر متعارف ہو چکی ہیں جب کہ ہمیں اس جانب اب خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے تربیتی ورکشاپ بہ عنوان ماحولیاتی تبدیلی کے تناظر میں کم پانی پر اگنے والی فصلیں اور جدید طرز آبپاشی منعقد ہوا تربیتی ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کیا دیگر ماہرین میں سینیئر ذرعی ماہر،محمد اقبال ترین،ہارون رحیم،ڈویژنل ڈائریکٹر عبداللہ شاہ،ڈپٹی ڈائریکٹر توسیعی ذراعت خضدار شاہ زمان،ڈپٹی ڈائریکٹر توسیعی ذراعت قلات محمد یحی، ذرعی ماہر نادر مسیح نے ورکشاپ سے خطاب کیا پروگرام کا آغاز تلاوت کلام پاک سے کی گئی عی ماہرین نے شرکت کی مقررین نے تربیتی ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس تربیتی ورکشاپ کے انعقاد کا مقصد یہ ہے کہ ہمیں اپنے ذرعی ماہرین کو دور حاضر کی ضروریات سے ہم آہنگ کرکے انہیں تخلیقی مواقع فراہم کیئے جا سکیں تقریب میں دیگر ماہریں نے شعبہ ذراعت میں جدت،کم پانی میں فصلوں کی افزائش اور فروغ پر ہر ممکن اقدامات کرنے کی ضرورت پر زور دیا علاوہ ازیں ذرعی ماہرین نے پانی کی کمی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پانی کی کمی ملک کا ایک اہم اور سنگین مسئلہ ہے اس مسئلے سے نمٹنے کے لیئے پانی بچاؤ مہم جنگی بنیادوں پر چلانا ہوگا لیکن افسوس کہ پانی کی قلت کے باوجود ہمیں اس قدرتی نعمت کا قدر نہیں کر رہے شرکا نے کہا کہ ذرعی ماہرین کو چاہئے کہ شعبہ زراعت کی ترقی اور ملکی خوشحالی کے لیئے لازمی ہے کہ ہر شخص اپنا بھرپور کردار ادا کرے ماہرین نے کہا کہ حکومت کی کوشش ہے کہ کسان خوشحال تو ملک خوشخال کے عمل پر کاربند ہے اور زرعی ترقی کے لیئے کسانوں کی بھر پور رہنمائی کر رہی ہے تاکہ زراعت کا شعبہ ترقی کرے ذرعی ماہرین نے اس بات پر اتفاق کی کہ ان فصلوں کو اگائے جانے کی ترغیب دی جائے جو کم سے کم پانی پر انحصار کر تے ہوں۔

متعلقہ عنوان :