صوبائی حکومت کا لیپ ٹاپ اسکیم کرپشن اور سیاسی رشوت کا ذریعہ بن چکی ہے، بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن

جمعرات اپریل 22:13

چاغی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پجار دالبندین زون گرلز کالج کے یونٹ سیکرٹری یاسمین بلوچ ڈپٹی یونٹ سیکرٹری گودی نسرین سعید بلوچ شنیلہ رادو خان جمالدین نے اپنے ایک مشترکہ جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ صوبائی حکومت کا لیپ ٹاپ اسکیم کرپشن اور سیاسی رشوت کا ذریعہ بن چکی ہے گزشتہ دنوں ضلع چاغی کے گرلز کالج میں طالبات میں جو سی ایم لپ ٹاپ اسکیم کے تحت تقسیم کیا گیا یہ بالکل ناانصافی اور اقراپروری کی بنیاد پر تقسیم کیا گیا ہے جب ایسے انعامات تقسیم ہوتے ہیں تو سب سے پہلے پوزیشن ہولڈز اور میرٹ کی بنیاد پر تقسیم کیا جاتا ہے لیکن انتہائی ستم ظریفی کی بات ہے کہ میرٹ تو اپنی جگہ یہ لیپ ٹاپ گرلز کالج کے ریگولر اسٹوڈنٹس کی بجائے ووٹرز کے بچوں میں تقسیم ہوے ہیں اس ناجائز طرزعمل سے صاف صاف ظاہر ہورہا ہے کہ کالج انتظامیہ کلرک اور ایم پی اے کی ملی بھگت سے اہل طلباء و طالبات کو محروم کیا گیاانہوں نے کہا کہ کالج انتظامیہ کا روایہ اسٹوڈنٹس کے ساتھ انتہائی غلط ہے اسٹوڈنٹس اپنے حق پر بات کرے تو انہیں امتحانی فارم نہ دینے کی دھمکی اور فیل کرنے کی دھمکی دے کر چپ کرایا جاتا ہی,انہوں نے کہا کہ کالج انتظامیہ اپنا قبلہ درست کررہے ہم ان زوراوراں کو واضح الفاظ میں بتانا چاہتے ہیں کہ گرلز کالج دالبندین کے طالبات کے ساتھ جو ناانصافیاں ہوئی ہیں بی ایس او پجار اس ناجائز عمل کیخلاف بھرپور ایکشن لیگی اور کالج انتظامیہ سمیت ایم پی اے چاغی کے طالبات کے حقوق پر اپنے من پسند افراد کو نوازنے کے خلاف بی ایس او پجار شدید احتجاج کریں گی۔

متعلقہ عنوان :