پاکستان اور جاپان کے درمیان اقتصادی اور تجارتی تعلقات کو مزید بڑھانے کی ضرورت ہے ، سید غضنفر عباس جیلانی

جاپانی حکومت پاکستان میں چند فلیگ شپ منصوبے شروع کر کے گراس روٹ لیول پر عوام کی سماجی واقتصادی ترقی میں اہم کردار ادا کرسکتی ہے، سیکرٹری اقتصادی امور ڈویژن کی جاپان کے سینئر نائب وزیرخارجہ امور یامازاکی کازکوکی سے گفتگو

جمعرات اپریل 21:49

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) سیکرٹری اقتصادی امور ڈویژن سید غضنفر عباس جیلانی نے کہا ہے کہ پاکستان اور جاپان کے درمیان اقتصادی اور تجارتی تعلقات کو مزید بڑھانے کی ضرورت ہے ،جاپانی حکومت پاکستان میں چند فلیگ شپ منصوبے شروع کر کے گراس روٹ لیول پر عوام کی سماجی واقتصادی ترقی میں اہم کردار ادا کرسکتی ہے جبکہ جاپان کے سینئر نائب وزیر برائے خارجہ امور یامازاکی کازوکی نے کہا ہے کہ پاکستان اہم شراکت دار ہے ،جاپان پاکستان کیساتھ تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے۔

سیکرٹری اقتصادی امور ڈویژن سید غضنفر عباس جیلانی نے یہ بات جمعرات کو پانچویں پاک جاپان اعلی سطح کے اقتصادی پالیسی مذاکرات کے دوران جاپانی سینئر نائب وزیر برائے خارجہ امور یامازا کی قیادت میں ملنے سے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہیں۔

(جاری ہے)

سیکرٹری اقتصادی امور ڈویژن سید غضنفر عباس جیلانی نے کہا کہ پاک جاپان اقتصادی و تجارتی تعلقات کو مزید بڑھانے کی ضرورت ہے ۔

انہوں نے کہا کہ سیکیورٹی صورتحال میں بہتری پائیدار اقتصادی ترقی کے ساز گار ماحول میں پاکستان میں سرمایہ کاری اور کاروبار کے بے پناہ مواقع پائے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان نے ملک میں سرمایہ کاری کیلئے انتہائی لبرل پالیسیاں وضع کر رکھی ہیں۔انہوں نے تجویز پیش کی کہ جاپانی حکومت پاکستان میں چند فلیگ شپ منصوبے شروع کر کے گراس روٹ لیول پر عوام کی سماجی و اقتصادی ترقی میں اہم کردار ادا کر سکتی ہے۔

انہوں نے جاپانی سرمایہ کاری میں اضافے کیلئے پاکستان نے ابھرتی سیکٹرز آٹو موبائل،آٹو پارٹس،الیکٹرک کار،الیکٹرونکس،سولر پینلز،کیمیکل اور پلاسٹکس کی نشاندہی کی۔ جاپان کے سینئر نائب وزیر خاجہ یامازاکی کازوکی نے کہا کہ جاپان پاکستان کیساتھ تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے ،دونوں ممالک کے درمیان تجارتی،اقتصادی اور سرمایہ کاری تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کی ضرورت ہے۔