سربراہ نا اہل اور جھوٹا ہو تو حواری ایماندار کیسے ہو سکتے ہیں ڈاکٹر طاہر القادری

آرٹیکل 62 اور 63 کا قوم کو جو شعور دیا آج اسکے ثمرات سامنے آ رہے ہیں،سر براہ عوامی تحریک نا اہل وزیر سے 5سال کی مراعات جرمانے سمیت وصول کی جائیں،افسوس 5سال سے نااہل ٹولہ ملکی تقدیر سے کھیلتا رہا

جمعرات اپریل 23:29

سربراہ نا اہل اور جھوٹا ہو تو حواری ایماندار کیسے ہو سکتے ہیں ڈاکٹر ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے کہا ہے کہ افسوس 5سال سے نااہل ٹولہ ملکی تقدیر سے کھیلتا رہا۔ووٹ کو عزت دینے کا ناٹک کرنے والے بتائیں آئین اور ملک کو عزت کیوں نہیں دی ۔نااہلی کافی نہیں قوم کے اعتماد کا خون کرنے والوں کو جیلوں میں بند کیا جائے۔جس جماعت کا سربراہ کرپٹ اور جھوٹا ہو اس کے حواری ایماندار کیسے ہو سکتے ہیں اسلام آباد میڈیا سیل کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے سنٹرل کور کمیٹی کے ممبران سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر سیکرٹری جنرل عوامی تحریک خرم نواز گنڈا پور ،بشارت جسپال ،فیاض وڑائچ ،مرکزی سیکرٹری اطلاعات نور اللہ صدیقی و دیگر ممبران کور کمیٹی موجود تھے۔

(جاری ہے)

قومی اداروں کیخلاف زبان درازی کرنے والوں کی زبانیں گدی سے کھینچ لینے کا وقت آگیا۔نااہل اور جھوٹے وزیر سے 5سال کی مراعات جرمانے سمیت وصول کی جائیں۔آرٹیکل 62 اور 63 کا قوم کو جو شعور دیا آج اس کے ثمرات سامنے ہیں۔یہ جھوٹے اور نااہل ہی نہیں بے گناہ شہریوں کے قاتل بھی ہیں۔عوام اس نااہل، کرپٹ اور قاتل ٹولے کا سیاسی بائیکاٹ کرے۔سپریم کورٹ کا فیصلہ جرأت مندانہ اور آئین کے مطابق ہے۔فیصلے سے سیاست میں عوامی خدمت اور عبادت کو جھوٹ سے الگ کرنے میں مدد ملے گی۔