خطر ناک اشتہاری مجرم کو عدالت میں پیش نہ کرنے پر سرگودھا کے تین تھانوں کے ایس ایچ اوز کیخلاف کاروائی کا حکم

جمعرات اپریل 23:52

سرگودھا (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) عدالت عالیہ لاہور ہائی کورٹ نے خطر ناک اشتہاری مجرم سلطان سکندر کو عدالتی احکامات کے باوجود عدالت میں پیش نہ کرنے پر سرگودھا کے تین تھانوں کے ایس ایچ اوز اور دیگر پولیس ملازمین کیخلاف کاروائی کیلئے آئی جی پولیس کو حکم دیدیا ہے تفصیلات کے مطابق ماڑی لک کی رہائشی امیراں بی بی نے لاہور ہائی کورٹ مین رٹ دائر کر رکھی ہے جسمیں الزام لگایاگیاہے کہ اُس کے خاوند سلطان سکندر کو سرگودھا کے تین تھانون جن میں جھال چکیاں ،جھاوریان اور شاہ پور صدر شامل ہیں پولیس نے 26فروری 2018؁ء کو گھر سے اُٹھا کر غائب کردیا ہے جسکی موت اور زندگی کے بارے میں کچھ معلوم نہیں چنانچہ عدالت عالیہ نے سرگودھا پولیس کو حکم دیا کہ سلطان سکندر کو عدالت میں زندہ یا مردہ پیش کیا جائے مگر پولیس کی طرف سے ایک ماہ کے بعد ملزم کو پیش کر کے عدالت کو بتایا گیا کہ ملزم سرگودھا سمیت پنجاب بھر میں 95سنگین مقدمات میں ملوث اشتہاری خطرناک ملزم ہے جس کے قبضہ سے گزشتہ ہفتہ دو ہینڈ گرنیڈ بھی بر آمد کر کے اُس کیخلاف دہشت گردی کا مقدمہ درج کیا گیا ہے فاضل عدالت نے پولیس کی اس کاروائی کو تسلیم کیا مگر عدالتی حکم پر ملزم کو پیش نہ کرنے پرآئی جی پولیس پنجاب کوحکم دیا کہ وہ تینوں تھانوں کے ایس ایچ او سمیت پولیس ملازمین کیخلاف کاروائی کر کے رپورٹ عدالت میں پیش کریں،

متعلقہ عنوان :