پاکستان میں پہلی بار بچوں کی فحش فلمیں بنانے والے مجرم کو قید اور جرمانے کی سزا سنا دی گئی

جمعہ اپریل 00:10

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اپریل2018ء) پاکستان میں پہلی بار بچوں کی فحش فلمیں بنانے والے مجرم کو قید اور جرمانے کی سزا سنا دی گئی۔نجی ٹیٰ وی کے مطابق لاہور کی ایک عدالت نے بچوں کی فحش فلمیں بنانے کا جرم ثابت ہونے پر ایک ملزم کو 7 سال قید اور 12 لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی ہے۔

(جاری ہے)

ملزم سادات امین کو ایف آئی اے حکام نے سرگودھا سے گرفتار کر کے اس کے قبضے سے بچوں کی ساڑھے 6 لاکھ فحش تصاویر اور وڈیوز برآمد کی تھیں۔

اسسٹنٹ ڈائریکٹر سائبر کرائمز آصف اقبال نے بتایا کہ ملزم کا بچوں کی فحش فلمیں بنانے والے گروہ سے تعلق تھا اور تفتیش کے دوران اس نے اس بات کا اعتراف بھی کیا تھا۔آصف اقبال نے بھی اس بات کی تصدیق کی کہ جوڈیشل مجسٹریٹ کی جانب سے سنائی جانے والی سزا پاکستان کی تاریخ میں ایسے کسی بھی مقدمے میں دی جانے والی پہلی سزا ہے۔

متعلقہ عنوان :