مشرقِ وسطی اور شمالی افریقا کے ممالک میں غیر متوقع شدید بارشیں اور طوفان

مصر ، سعودی عرب اور غربِ اردن میں معمولات ِزندگی درہم برہم ،اسرائیل میں دوافرادسیلابی ریلے میں بہہ گئے

جمعہ اپریل 12:23

ْریاض(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اپریل2018ء) متعدد عرب ممالک کو رواں ہفتے کے دوران میں ناقابل پیشین گوئی موسمی صورت حال کا سامنا رہا ہے ۔۔مصر ، سعودی عرب اور غربِ اردن میں شدید بارشیں ہوئیں جس سے ٹریفک کا نظام اور معمولات ِزندگی درہم برہم ہو کر ر ہ گئے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق سعودی عرب کے جنوبی صوبے جازان سمیت مختلف علاقوں میں حالیہ دنوں میں موسمی اتار چڑھاؤ دیکھنے میں آیا ہے اور ریت کے طوفان کی وجہ سے ایک سو میٹر تک بھی کچھ دکھائی نہیں دے رہا تھا۔

سعودی عرب کے ڈائریکٹر جنرل برائے شہری دفاع کا کہنا تھا مملکت کے مختلف علاقوں میں ہلکی اور شدید بارش مزید 24گھنٹے تک جاری رہنے کا امکان ہے۔۔مصر کے دارالحکومت قاہرہ اور دوسرے شہروں میں گذشتہ دو روز میں شدید بارشیں ہوئیں اور قاہرہ کے مشرق میں شدید بارشوں سے بڑی شاہراہیں زیر آب آگئیں۔

(جاری ہے)

گذشتہ روز اسرائیل کے مقبوضہ مغربی کنارے میں شدید بارش ہوئی اور دو افراد سیلابی ریلے میں بہہ گئے ۔

ان میں ایک نوجوان اور ایک ضعیف العمر شخص تھا۔اس فلسطینی علاقے میں آیندہ دو روز تک سیلابی صورت حال متوقع ہے۔ سیلاب سے مغربی کنارے کے مختلف علاقوں میں شاہراہیں بند اور ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو کر رہ گیا ۔الجزائر کے شہر طائرت میں بھی شدید بارشوں کے بعد شاہراہیں ٹریفک کے لیے بند کردی گئیں اور بہت سے عمارتیں اور مکانات زیر آب آ گئے ۔پڑوسی ملک مراکش کی قومی نظامت برائے موسمیات کے مطابق گرج چمک کے ساتھ آئندہ دوروز تک بارش کا امکان ہے ۔