معروف پٹرولیم ساز کمپنی ’شیل‘ پر ملک بھر میں پابندی عائد

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعہ اپریل 12:02

معروف پٹرولیم ساز کمپنی ’شیل‘ پر ملک بھر میں پابندی عائد
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔27 اپریل2018ء) پاکستان میں ٹیکس چوری کرنے کی وجہ سے ’ شیل ‘ کمپنی پر پابندی عائد کر دی گئی ۔تفصیلات کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو ((ایف بی آر)) نے جان بوجھ کر ٹیکس سے بچنے اور ٹیکس میں فراڈ سے کام لینے کی وجہ سے شیل پاکستان کے سیلز ٹیکس رجسٹریشن کو معطل کر دیا ہے۔ ایف بی آر نے 3 ملین روپے کے ٹیکس چوری کی وجہ سے ’شیل ‘ پاکستان کی رجسٹریشن کو معطل کیا ہے۔

اس رجسٹریشن کی منسوخی کے بعد شیل پاکستان میں کوئی کاروبار نہیں کر سکے گی۔شیل نے اپنی کمپنی کی مصنوعات کی فروخت کی اصل قیمت کو چھپایا۔

(جاری ہے)

اور کم ٹیکس ادا کیا۔عاصمہ آفتاب کا کہنا تھا کہ سیلز ٹیکس کی جانچ پڑتال کے دوران دسمبر 2016 سے لے کر فروری 2018 تک شیل پاکستان نے سیلز ٹیکس اور فیڈرل ایکسائز ریٹرنس کے ضمیمہ میں چکنا تیل کے اسٹاک کو چھپا لیا تھا۔

اور اس تمام عرصے کے دوران شیل پاکستان نے 7.684 بلین کی سیل کی۔اور اس کے مطابق اتنی سیل پر 1.46 ملی ٹیکس لاگو ہوتا ہے۔۔ایف بی آر نے شیل کمپنی پر 142.503 ملین کی ایک اضافی چارج شیٹ بھی لگائی ہے۔اور 5 فیصد کی شرح کے حصاب سے 70.003 ملین روپے کا جرمانہ بھی عائد کیا ہے۔۔ایف بی آر کے مطابق شیل پاکستان گزشتہ 3 سال سے ٹیکس دینے کے معاملے میں دھوکہ دہی سے کام لے رہا تھا۔