تجارتی تنازعات میں کوئی فاتح نہیں ،چین کی جانب سے مذاکرات کا دروازہ ہمیشہ کھلا ہے، چینی وزیر اعظم

یہ عالمی صنعتی سلسلہ کے لیے بھی نقصان دہ ہے،چین کھلے پن کو مسلسل اور غیر متزلزل طور پر توسیع دے گا چینی وزیر اعظم لی کی چیانگ کی امریکی وزیر ٹرانسپورٹ سے ملاقات میں گفتگو

جمعہ اپریل 14:10

بیجنگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اپریل2018ء) چینی وزیر اعظم لی کی چیانگ نے کہا ہے کہ تجارتی تنازعات میں کوئی فاتح نہیں ہوتا ہے،،چین کی جانب سے مذاکرات کا دروازہ ہمیشہ کھلا ہے، یہ عالمی صنعتی سلسلہ کے لیے بھی نقصان دہ ہے،،چین کھلے پن کو مسلسل اور غیر متزلزل طور پر توسیع دے گا۔ چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق چین کے وزیر اعظم لی کی چیانگ نے امریکہ کی وزیر برائے ٹرانسپورٹ ایلین ایل چاو سے بیجنگ میں ملاقات کی۔

ملاقات کے موقع پرلی کی چیا نگ نے کہا کہ چین اور امریکہ کا اقتصادی و تجارتی تعاون درحقیقت باہمی مفادات پر مبنی ہے۔تجارتی تنازعات میں کوئی فاتح نہیں ہوتا ہے۔تجارتی تنازعات کے عالمی معیشت کی بحالی کے عمل پر منفی اثر ات پڑیں گے اور یہ گلوبل انڈسٹریل چین((عالمی صنعتی سلسلہ)کے لیے بھی نقصان دہ ہے۔

(جاری ہے)

صرف مذاکرات کے ذریعے موجودہ مسائل کو حل کیا جاسکے گا۔

امریکہ نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ بات چیت اور مشاورت کے ذریعے تجارتی تنازعات کو حل کیا جائے گا۔۔چین بھی اس بات پر زور دیتا ہے اور چین کی جانب سے مذاکرات کا دروازہ ہمیشہ کھلا ہے۔۔چین کھلے پن کو مسلسل اور غیر متزلزل طور پر توسیع دے گا۔امید ہے کہ امریکہ سمیت دنیا کے مختلف ممالک چین کی کھلی پالیسی سے وجود میں آنے والے مواقعوں سے مستفید ہوں گے۔

اس کے ساتھ ساتھ چین امریکہ کے ساتھ خود کار ڈرائیونگ ٹیکنالوجی سمیت نقل و حمل سے متعلق حقیقی تعاون کو فروغ دینا چاہتا ہے۔امریکی وزیر ایلین ایل چاو نے کہا کہ اس وقت امریکہ-- چین تعلقات ترقی کے اہم مرحلے میں ہیں۔فریقین درپیش بعض مشکلات پر قابو پانے کی کوشش کررہے ہیں۔امید ہے کہ فریقین کو اقتصادی و تجارتی مسائل پر مشاورت سے مثبت نتائج حاصل ہوں گے۔