ترکی کی یورپ پر شدید تنقید،انسداددہشتگردی معاملہ پر مغربی معیار دہرا قرار

مغرب کا انسداد دہشت گردی حوالے سے موقف قابل تشویش،مغرب داعش اور القائدہ پربات کرتاہے مگر پی کے کے اور گولن جیسی خطرناک تنظیموں پر خاموش ہوتا ہے،ترک وزیر داخلہ سلیمان سوئیلو

جمعہ اپریل 19:41

پیرس(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اپریل2018ء) ترک وزیر داخلہ سلیمان سوئیلو نے کہا ہے کہ انسداددہشتگردی معاملہ پرمغرب کا دوہرامعیارہے،مغربی دنیا کا انسداد دہشت گردی کے حوالے سے موقف قابل تشویش ہے،مغربی ممالک داعش اور القائدہ پربات کرتے ہیں مگر پی کے کے اور گولن جیسی خطرناک تنظیموں پر خاموش ہو جاتے ہیں۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق پیرس میں انسداد دہشتگردی کی عالمی کانفرنس کے دوران ترک وزیر داخلہ سلیمان سوئیلو نے انسداد دہشتگردی کے معاملے میں مغربی ممالک کے دوہرے معیار پرتنقید کی۔

وزیر داخلہ سلیمان سوئیلو نے انسداد دہشتگردی کے معاملے میں مغربی ممالک کے دوہرے معیار پر تنقید کی۔ پیرس میں انسداد دہشتگردی کی عالمی کانفرنس منعقد ہو رہی ہے جس میں 70 ممالک اور 20 عالمی تنظیموں کے نمائندے شرکت کر رہے ہیں۔

(جاری ہے)

کانفرنس کے اہم موضوعات میں داعش اور القائدہ جیسی تنظیموں کی مالی امداد کے راستے مسدود کرنا شامل ہے۔اس کانفرنس میں ترکی کی نمائندگی وزیر داخلہ سلیمان سوئیلو اور وزیر خزانہ ناجی اعبال کر رہے ہیں۔

کانفرنس سے خطاب کے دوران وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ مغربی دنیا کا انسداد دہشت گردی کے حوالے سے موقف قابل تشویش ہے جہاں دہشتگردوں کے درمیان امتیاز روا رکھنا معمول بن چکا ہے علاوہ ازیں یہ ممالک داعش اور القائدہ پر تو بات کرتے ہیں مگر پی کیکے اور گولن جیسی خطرناک تنظیموں پر خاموش ہو جاتے ہیں۔

متعلقہ عنوان :