محکمہ تعلیم سکولزضلع نیلم میں جونیئر کلرکان کی آسامیوں پر بوگس تقرریوں کا انکشاف

میرٹ کے قتل کے خلاف عوام کا شدید احتجاج

جمعہ اپریل 19:47

آٹھ مقام(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اپریل2018ء) محکمہ تعلیم سکولزضلع نیلم میں جونیئر کلرکان کی آسامیوں پر بوگس تقرریوں کا انکشاف۔ میرٹ کے قتل کے خلاف عوام کا شدید احتجاج۔۔ فرضی میرٹ بنا کر اقرباء کو نواز جانے لگا۔ پیپلز پارٹی نیلم کے صدر میر نذیر دانش ایڈوکیٹ نے میڈیا کو ثبوت دیتے ہوئے کہا کہ سپیکر غلام قادر نے محکمہ تعلیم نیلم میں جونیئر کلرکان کی خالی آسامیوں پر میرٹ سے ہٹ کر تقرریوں کے لئے فہرست حکام کو تھما دی ہے۔

مشتہر ہونے اور ٹسٹ انٹرویو سے قبل ہی آڈر زجاری کر دئیے ہیں۔ ان پانچ آسامیوں میں سے تین پر سپیکر غلام قادر نے اپنے من پسند افراد کی تقرریاں پہلے ہی سے کر رکھی ہیں۔ جبکہ دوآسامیاں خالی ہیں۔غلام قادر نے ڈی پی آئی راجہ روشن جوہر کو ہاسٹل میں بلا کر من پسند افراد کی تقرریوں کے لئے دبائو ڈالا ہے ۔

(جاری ہے)

دوسٹ ہائی سکول میں بشیر شمس جوکہ پی آراو کا بھانجا ہے غلام قادر نے ڈی پی آئی کوتقرری کی ہدایت دے دی ہے۔

شفیق نامی شخص کی تقرری کی گئی ہے۔ جبکہ عزیز مارشل کے داماد شاہد رشید کا نام بھی زیر غور ہے۔ جاگراں ایچ ایس میں بھی انگوٹھا چھاپ ن لیگ کے ورکر کی تقرری کی گئی ہے۔ انھوں نے کہا کہ حکومت میرٹ کے نام پر فراڈ کر رہی ہے۔ شاہ غلام قادر اپنی رائے کو میرٹ سمجھتا ہے جوکہ آئین قانون کی صریح خلاف ورزی ہے ۔ بوگس تقرریاں کرنی ہیں تو بے شک کریں لیکن میرٹ اور گڈ گورننس کے حروف کی تذلیل نہ کریں۔

درخواست کے نام پر ایک ہزار روپے تک فی امیدوار کا خرچہ کروایا گیا ہے۔ لاکھوں روپے درخواستیں جمع کرنے کے نام پر لوٹے گئے ہیں۔ مسلم لیگ ن ایک طرف عوام کے حق پر ڈاکہ ڈال رہی ہے جبکہ دوسری طرف بے روزگار نوجوانوں کے جیب کاٹ رہی ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی مسلم لیگ ن کے مکروہ دھندے کی مذمت کرتی ہے ۔ متاثرہ امیدوار عدالت سے رجوع کریں انھیں مفت قانونی معاونت فراہم کی جائے گی۔