سندھ اسمبلی میں پی ٹی آئی رکن خرم شیر زمان کی اسپیکر کے ساتھ ہتک آمیز رویہ اختیار کرنے پر مذمتی تحریک متفقہ طور پر منظور

جو شخص اسپیکر کی توہین کرے اسے سز ا ملنی چاہیے ،اسمبلی کے تقدس کو پامال کرنے کی کسی کو اجازت نہیں دی جاسکتی، سینئر وزیر نثار کھوڑو ہمدردیاںاسکے ساتھ ہیں،خواہش ہے کچھ سیکھے اور اپنی اہمیت بنائے ،میں نے تیس سال یہاں آکر سیکھاہے ،اسکو میڈیا پر آنے کا بہت شوق ہے، اسپیکر اسمبلی

جمعہ اپریل 23:25

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اپریل2018ء) سندھ اسمبلی نے جمعہ کو اپنے اجلاس کے دوران پاکستان تحریک انصاف کے رکن اسمبلی خرم شیر زمان کی جانب سے ایوان کی کارروائی کے دوران اسپیکر آغا سراج درانی کے ساتھ ہتک آمیز رویہ اختیار کرنے پر ان کے خلاف مذمتی تحریک متفقہ طور پر منظور کرلی ۔ تحریک سینئر وزیر پارلیمانی امور نثار احمد کھوڑو نے پیش کی تھی۔

نثار کھوڑو نے کہا کہ جو شخص اسپیکر کی توہین کرے اسے سز ا تو ملنی چاہیے ، انہوں نے کہا کہ وہ سین بناناچاہتا تھا کہ فوٹوچھپ سکے ،یہ مذاق نہیں ہوناچاہیے اسمبلی کے تقدس کو پامال کرنے کی کسی کو اجازت نہیں دی جاسکتی۔نثار کھوڑو نے اسپیکر سے کہا کہ خرم شیر زمان نے آپ کے خلاف غلط زبان استعمال کی اٴْسے معطل کیا جائے ۔

(جاری ہے)

جس پر اسپیکر نے کہا کہ میری ہمدردیاںاسکے ساتھ ہیں،خواہش ہے کہ وہ کچھ سیکھے اور اپنی اہمیت بنائے ،میں نیتیس سال یہاں آکر سیکھاہے ،اسکو میڈیا پر آنے کا بہت شوق ہے ۔

اللہ عزت دیتا ہے اور انسان اپنی عزت خودبناتا ہے انہوں نے کہا کہ کاغذ پھینک کر وہ سمجھ رہاہے کہ۔میری بے عزتی ہوئی،ایسا نہیں ہے۔ بعدازاں ایوان نے خرم شیر زمان کے خلاف سندھ اسمبلی نے مذمتی تحریک متفقہ طور پر منظور کرلی ۔نثار کھوڑو نے کہا کہ اسپیکر کی چیئر مقدس ہے ایوان کے تمام میمبرا اسپیکر کو جوابدہ ہیں ۔ بعدازاںسندھ اسمبلی کا اجلاس پیر کی سہ پہر تین بجے تک ملتوی کردیا گیا۔