طالبان سے نمٹنے کے لیے افغان حکومت کی مدد جاری رکھی جائیگی،امریکہ

نائب امریکی صدرپینس کی فون پر صدر غنی سے گفتگو، داعش کے حملوں میں جانی نقصان پر اظہارِ تعزیت کیا،وائٹ ہائوس

ہفتہ اپریل 13:33

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) وائٹ ہائوس نے بتایا ہے کہ نائب امریکی صدر مائیک پینس نیٹیلی فون پر افغان صدر اشرف غنی سے گفتگو کی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک بیان میں وائٹ ہاؤس نے بتایا کہ نائب صدر نے داعش کے حالیہ حملوں میں افغان عوام کی ہلاکتوں پر انتظامیہ کی جانب سے تعزیت کا اظہار کیا، جو اپنے ملک کے انتخابی عمل میں شرکت کے خواہاں ہیں۔

(جاری ہے)

مائیک پینس نے جمہوری انتخابات کے انعقاد اور سیاست میں سب کی شمولیت کی اہمیت کو اجاگر کیا، جو حکومتِ افغانستان کے طویل مدتی استحکام اور مؤثر ہونے کے لیے لازم ہے۔۔موسم بہارکی کارروائی کے بارے میں طالبان کے حالیہ اعلان کے جواب میں، امریکی نائب صدر نے امریکہ اور بین الاقوامی برادری کی جانب سے اِس بات کا اعادہ کیا کہ جنوبی ایشیا سے متعلق صدر ٹرمپ کی حکمتِ عملی کے تحت افغان حکومت اور سلامتی افواج کا ساتھ دیا جائے گا اور حمایت جاری رکھی جائے گی۔

ادھر اِس ضمن میں اپنے ایک ٹوئٹ میں صدر غنی نے کہا کہ امریکی نائب صدر مائیک پینس نے اٴْن سے گفتگو کی جس میں اٴْنھوں نے کابل اور دیگر صوبوں میں ہونے والے حالیہ المناک حملوں میں جانی نقصان پر دل کی گہرائی کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا۔