سعودی عرب ،نجی اداروں میں قومی لباس کی پابندی پر عملدرآمد شروع

ہفتہ اپریل 15:10

مکہ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) سعودی عرب شہر مکہ کے گورنر شہزادہ خالد الفیصل کی ہدایت پر خصوصی ٹیم نے نجی اداروں و کمپنیوں میں کام کرنے والے سعودی شہریوں پر عائد کی جانے والی قومی لباس کی پابندی شروع کرادی۔

(جاری ہے)

سعودی اخبار کے مطابق گورنرکے ترجمان سلطان الدوسری نے بتایا کہ اگر کوئی شخص کام کی نوعیت کے باعث قومی لباس زیب تن کرنے میں دشواری محسوس کرے تو اسے استثنیٰ دیا جاسکتا ہے تاہم اسکے لئے اسے باقاعدہ درخواست دینا ہوگی۔ وزارت محنت کی مکہ مکرمہ شاخ درخواست نمٹائے گی۔ ڈاکٹروں، نرسوں ، سکیورٹی گارڈز، انجینیئرز اور باورچی خانوں کے کارکن قومی لباس کی پابندی سے مستثنیٰ ہوںگے