سپریم کورٹ نےڈاکٹرتوقیرشاہ کوبیرون ملک جانےسےروک دیا

توقیرشاہ کی کارکردگی سےکوئی دلچسپی نہیں،تقرری میں توسیع کا جائزہ لیںگے،سانحہ ماڈل ٹاؤن میں نام ہےتقرری کیسےہوگئی۔چیف جسٹس سپریم کورٹ کے ریمارکس

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ ہفتہ اپریل 15:53

سپریم کورٹ نےڈاکٹرتوقیرشاہ کوبیرون ملک جانےسےروک دیا
اسلام آباد(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔28 اپریل 2018ء) : سپریم کورٹ نےڈاکٹرتوقیرشاہ کو بیرون ملک جانے سے روک دیا،توقیرشاہ کی کارکردگی سے کوئی دلچسپی نہیں،تقرری میں توسیع کا جائزہ لیںگے،سانحہ ماڈل ٹاؤن میں نام ہےتقرری کیسےہوگئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق چیف جسٹس سپریم کورٹ کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نےوزیراعلیٰ پنجاب کےسابق پرنسپل سیکرٹری کی بیرون ملک تقرری کیخلاف ازخود نوٹس کی سماعت کی۔

سپریم کورٹ کےحکم پرتوقیرشاہ پیش ہوگئے۔عدالت نےحکومت کوتوقیر شاہ کی تقرری میں توسیع کا نوٹیفکیشن جاری کرنے سے روک دیا ہے۔ چیف جسٹس سپریم کورٹ نے توقیر شاہ کی کارکردگی رپورٹ دیکھنے سے بھی انکار کردیا ۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ہمیں آپ کی کارکردگی سے کوئی دلچسپی نہیں ہے۔

(جاری ہے)

عدالت توقیرشاہ کی تقرری کا دوبارہ سے جائزہ لے گی۔ ہم نےدیکھنا ہےآپ کی ورلڈ ٹریڈ آرگنائزیشن میں کیسےتقرری ہوئی؟ توقیرشاہ کی تقرری میں کی گئی توسیع کا بھی جائزہ لیں گے۔

سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے وضاحت دی کہ وزیراعظم نےتوقیرشاہ کی تقرری میں توسیع کی منظوری دی ہے۔ توقیر شاہ نے استدعا کی کہ بیرون ملک جانے سے متعلق پابندی پر نظر ثانی کی جائے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ آپ کی تقرری کیسےہوگئی جبکہ آپ کاسانحہ ماڈل ٹاؤن میں نام تھا؟ توقیر شاہ نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کی ایف آئی آر میں نامزد نہیں ہوں۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ اس کا فیصلہ عدالت کرےگی۔ آپ عدالت کی اجازت کے بغیر بیرون ملک نہیں جا سکتے۔ توقیر شاہ نے کہا کہ مجھے عدالت کا مکمل احترام ہے۔ توقیر شاہ نے کہا کہ مجھے کوئی عدالتی نوٹس موصول نہیں ہوا، میڈیا کی رپورٹ دیکھ کر پیش ہوا ہوں۔