بنیان پہن کر خاتون کا آپریشن کرنے والے ڈاکٹر کیخلاف برسوں بعد سخت ایکشن ہوگیا

چیف جسٹس کا بنیان پہن کر خاتون کا آپریشن کرنے والے عطائیوں کو گرفتار کرنے کا حکم، عدالتی حکم پر ایس پی جھنگ نے ملزم ایوب اور حر کو احاطہ عدالت سے گرفتار کر لیا، عدالت نے آئندہ سماعت پر ڈاکٹر رفیق کو پیش ہونے کی ہدایت

ہفتہ اپریل 18:22

بنیان پہن کر خاتون کا آپریشن کرنے والے ڈاکٹر کیخلاف برسوں بعد سخت ایکشن ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں قائم دو رکنی بنچ نے بنیان پہن کر خاتون کا آپریشن کرنے والے عطائیوں کو گرفتار کرنے کا حکم دیدیا، عدالتی حکم پر ایس پی جھنگ نے ملزم ایوب اور حر کو احاطہ عدالت سے گرفتار کر لیا، عدالت نے آئندہ سماعت پر ڈاکٹر رفیق کو پیش ہونے کی ہدایت کی ہے، فاضل چیف جسٹس پاکستان نے عطائیوں کے کمرے میں بنیان پہن کر خاتون کا آپریشن کرنے کی ویڈیو پر ازخود نوٹس لے رکھا ہے، عدالت میں سماعت کے دوران جھنگ پولیس کی جانب سے بتایا گیا کہ ملزم جھنگ میں الفلاح کلینک میں خاتون کا آپریشن کر رہے تھے، یہ کلینک ڈاکٹر رفیق کا ہے جو پی ایم ڈی سی سے رجسٹرڈ ہیں، پولیس کے مطابق ملزم ایوب ہومیو پیتھک کا ڈپلومہ ہولڈر ہے اور ایلوپیتھک ادویات رکھتا ہے، دوران سماعت فاضل چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ عدالت میں موجود ہر شخص کو ملزموں کی شکل دکھائی جائے جو انسانی جانوں سے کھیلتے ہیں فاضل چیف جسٹ نے استفسار کیا کہ ابھی تک ڈاکٹر رفیق کو کیوں نہیں پکڑا یہ معاملہ ایف آئی اے کو بھجواتے ہیں، فاضل چیف جسٹس نے ملزم سے پوچھا کہ سچ بتائو جھنگ میں خاتون کا آپریشن کر رہے تھے کہ نہیں جس پر ملزم نے کلمہ پڑھ کر بتایا کہ آپریشن ڈاکٹر نے کیا تھا ہم صرف پٹی کر رہے تھے، فاضل چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ملزم جھوٹ بول رہا ہے ان کو گرفتار کر کے لے جائیں اور مقدمہ درج کریں جس پر اییس پی جھنگ نے احاطہ عدالت میں ملزم ایوب اور حر کو گرفتار کر لیا۔