تحریک انصاف (کل)مینار پاکستان پر سیاسی طاقت کا مظاہرہ کریگی،

تمام انتظامات مکمل کر لئے گئے شاہراہوں کو عمران خان کی تصاویر ،مختلف نعروں پر مبنی بینرز ،سٹیمرزاور فلیکسز سے سجا دیا گیا ، رہنمائوںنے پنڈال کا دورہ کر کے انتظامات کا جائزہ لیا گاڑیوں پر لائوڈ اسپیکرز لگا کر پارٹی نغمے سنائے جاتے رہے ،عوام کو شرکت کی دعوت بھی دی گئی ،ملک بھر سے مرد و خواتین کارکنوں کی آمد کا سلسلہ شروع حکومت ٹرانسپورٹرز کو خوفزدہ کر رہی ہے ، کارکنوں کو شرکت سے روکا گیا تو اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے ‘ شعیب صدیقی کی میڈیا سے گفتگو

ہفتہ اپریل 19:02

تحریک انصاف (کل)مینار پاکستان پر سیاسی طاقت کا مظاہرہ کریگی،
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) پاکستان تحریک انصاف کل (اتوار) کے روز مینار پاکستان پر اپنی سیاسی طاقت کا مظاہرہ کرے گی جس کیلئے تمام انتظامات کو حتمی شکل دیدی گئی ،،پی ٹی آئی کی جانب سے لاہور کی شاہراہوں کو عمران خان کی تصاویر ،مختلف نعروں پر مبنی بینرز، سٹیمرز اور فلیکسز سے سجا دیا گیا ، جلسے میں شرکت کیلئے ملک بھر سے مرکزی رہنمائوں سمیت مرد و خواتین کارکنوں کی آمد کا سلسلہ بھی شروع ہو گیا ،دوسرے شہروں سے آنے والی گاڑیوں کے لئے ٹریفک پلان اور شرکاء کے پنڈال میں داخلے کیلئے اینٹری پوائنٹس کا اعلان کر دیا گیا ۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کے آج اتوار کے روز مینار پاکستان پر منعقدہ جلسے کیلئے سکیورٹی سمیت تمام انتظامات کو حتمی شکل دیدی گئی ہے ۔

(جاری ہے)

منتظمین کی جانب سے اسٹیج سمیت پنڈال کو بھی مکمل کر لیا گیا ہے اور کسی بھی نا خوشگوار واقعہ سے بچنے کیلئے بار بار جانچ پڑتا ل کی گئی ہے۔۔پی ٹی آئی ترجمان کے مطابق پنڈال کو تین حصوںمیں تقسیم کیا گیا جس کیلئے پارٹی کے متحرک رہنمائوں اور کارکنوں کو سکیورٹی سمیت دیگر انتظامات کی ذمہ داریاں سونپ دی گئی ہیں۔

بابا حیدر سائیں دربار سے ملحقہ گیٹ نمبر ایک صرف فیملیز اور خواتین کے لئے مختص ہوگا ، گیٹ نمبر دو وی آئی پیز جبکہ لیڈی ولنگڈن گیٹ اور مرکزی گیٹ عام پبلک کیلئے مختص ہوں گے۔ گزشتہ روز پی ٹی آئی کی جانب سے لائوڈ اسپیکرز لگی گاڑیوں کے ذریعے شہر کے مختلف مقامات میں پارٹی نغمے سنائے جاتے رہے اور اس کے ساتھ ساتھ عوام کو جلسے میں شرکت کی دعوت بھی دی گئی ۔

مینار پاکستان جلسے کیلئے ٹریفک پلان بھی جاری کر دیا گیا ہے جس کے مطابق جنوبی پنجاب سے آنے والی ٹریفک ٹھوکر نیاز بیگ موٹر وے بابو صابو انٹر چینچ براستہ رنگ روڈ نیازی چوک سے ہوتے ہوئے مینار پاکستان پہنچے گی ۔ گجرات ، سیالکوٹ اور گوجرانوالہ سے آنے والی ٹریفک براستہ جی ٹی روڈ شاہدرہ موڑ نیازی چوک سے ہوتے ہوئے مینار پاکستان آئے گی ۔

موٹر وے سے آنے والی ٹریفک کا لا شاہ کاکو انٹرچینچ سے خروج کر کے شاہدارہ سے ہوتے ہوئے نیازی چوک اور پھر جلسہ گاہ تک پہنچے گی ۔ شیخوپورہ سے آنے والی ٹریفک براستہ سگیاں پل سے ناصر باغ اور پھر مینار پاکستان پہنچے گی ۔ شکر گڑھ نارروال اور نارنگ منڈی سے آنے والی ٹریفک براستہ کالا خطائی روڈ شاہدرہ سے جلسہ گاہ آئے گی جبکہ قصور سے آنے والی ٹریفک فیروز پور روڈ سے ہوتے ہوئے براستہ جین مندر ایم اے او کالج اور سول سیکرٹریٹ سے ناصر باغ آ کر مینار پاکستان پہنچے گی ۔

مینار پاکستان پر منعدہ جلسے میں شرکت کے لئے پنجاب کے دوسرے اضلاع اور ملک کے دیگر صوبوں سے مرد و خواتین کارکنوں کی آمد شروع ہو گئی ہے جن کیلئے منتظمین نے رہائش اور کھانے کیلئے خصوصی انتظامات کئے ہیں۔آج اتوار کے روز منعقد ہونے والے جلسے کیلئے اسٹیج سیکرٹری کے فرائض فیصل جاوید سر انجام دیں گے ۔اسٹیج کے عقب میں دیو ہیکل سکرین آویزاں کر دی گئی ہے جس پر عمران خان کی 22سالہ جدوجہد پر دستاویزی فلم دکھائی جائے گی ۔

اس موقع پر پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ کی قیادت کی کرپشن کو رپورٹ کی صورت میں پیش کیا جائے گا ۔ جلسے سے عمران خان کے علاوہ درجن بھر رہنما خطاب کریں گے اورہر مقرر کو منفرد موضوع پر اظہار خیال کی دعوت دی جائے گی ۔ جلسے میں وطن پاک سے وفاداری کا حلف خصوصی طور پر پروگرام کا حصہ ہوگا جبکہ ملک کے نامور گلوکار مادر وطن کی عقیدت میں ملی نغمے پیش کریں گے اور شرکا کا لہو گرمائیں گے ۔

جلسے کے شرکا ء مینار پاکستان کے سائے میں ایک ساتھ قومی ترانہ پڑھیں گے ۔ پی ٹی آئی ترجمان کے مطابق عمران خان اپنی سیاسی زندگی کا سب سے اہم خطاب کریں گے ۔۔عمران خان نئے پاکستان کے حوالے سے اپنا نظریہ بیان کریں گے اور اپنا مفصل لائحہ عمل دیں گے ۔۔پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما شعیب صدیقی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ حکومت نے ٹرانسپورٹ کی پکڑ دھکڑ شروع کر دی ہے ۔ حکومت کو متنبہ کرنا چاہتے ہیں کہ ایسے ہتھکنڈے نہ اپنائے جائیں کہ ہمیں پر امن جلسے کو احتجاج میں تبدیل کرنا پڑ جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم پر امن لوگ ہیں لیکن اگر حکومت نے کارکنوں کو روکا تو اینٹ کا جواب پتھر سے دیا جائے گا۔