بجٹ میں کسانوں، مزدوروں اور غریب عوام کے لیئے کچھ نہیں ہے،ایاز لطیف پلیجو

وفاق نے 10 کھرب کے ترقیاتی بجیٹ بجیٹ میں سندھ سمیت تینوں صوبوں کو نظرانداز کیا ہے،سندھ میں غربت، بوکھ، بدحالی اور بیروزگار ی کی وجہ سے خودک سوزی کے واقعات بڑھ گئے ہیں،مرکزی صدرقومی عوامی تحریک

ہفتہ اپریل 21:09

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) قومی عوامی تحریک کے مرکزی صدر ایاز لطیف پلیجو نے وفاقی بجٹ کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کے بجٹ میں کسانوں، مزدوروں اور غریب عوام کے لیئے کچھ نہیں ہے۔ وفاقی حکومت نے 10 کھرب کے ترقیاتی بجیٹ بجیٹ میں سندھ سمیت تینوں صوبوں کو نظرانداز کیا ہے۔ ہمارا المیا یے ہے کے پیٹرول،، گیس ،زراعت، سمندر سمیت انیک وسائل ہونے کے باوجود کروڑوں عوام 2 وقت کی روٹی کے لیئے پریشان ہے۔

سندھ میں غربت، بوکھ، بدحالی اور بیروزگار ی کی وجہ سے خودک سوزی کے واقعات بڑھ گئے ہیں۔ صحت کی سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے غریب لوگ بیماریوں میں تڑپ تڑپ کر مر رہے ہیں۔ ہر بجیٹ امیر کو مزید امیر اور غریب کو غریب تر کرتے ہے۔ انہوں نے یہ اظہار بی 48 پرنس ٹائون حیدرآباد میں جامشورو سے آئے شہریوں کے وفد سے گفتگو میں کیا۔

(جاری ہے)

ایاز لطیف پلیجو نے مزید کہا کے کرپشن اور اقرباپروری کی وجہ سے پاکستان کو سوشل ویلفیئر اسٹیٹ بنانے کا خواب تعبیر نہیں ہو سکا ہے۔

سندھ میں زمینوں پر قبضے کے لیئے چھوٹے اور مخالف آبادگاروں کو پانی نہیں دیا جا رہا۔ گندم، گنے، چانول سمیت تمام فصل کی قیمتیں گرائی جاتی ہیں۔ تباہ کی گئی زراعت کی بحالی کے لیئے کھاد، بیج، زرعی ادویات، ٹریکٹر، زرعی اوزار سستا کرکے حکومت زرعی پیکیج دیتی۔ تویل لوڈشیڈنگ کے عذاب سے جان چھڑانے کیلئے سولر سسٹم اور یو پی ایس کی قیمتیں کم کر کے اس پر سے ٹیکس ختم کیا جاتا۔

بجلی کو سستا کیا جائے۔ وفاقی حکومت سندھ کے پسماندہ علاقوں اچھڑو تھر،، تھرپارکر، کوہستان، کاچھو، عمرکوٹ،بدین، سانگھڑ اور دیگر علاقوں کیلئے پیکیج دیا جاتا۔ سندھ اور پاکستان میں غریب کسانوں،مزدوروں، اقلیتوں، بیواہوں، نابالغ یتیم اور معذور لوگوں کیلئے حکومت میڈیکل اور خوراک کے کارڈ جاری کرتی۔ حکومت کو موٹر سائیکلوں اور سائیکلوں پر سے ٹیکس ختم کرنا چاہیئے تھا۔ سندھ سمیت پاکستان کے دیگر صوبوں سے پیٹرول اور گیس نکلتا ہے مگر اس کی قیمتیں بڑہائی جا رہی ہیں، ان قیمتوں کو گھٹایا جائے۔ پیٹرول 50 روپے لیٹر کیا جائے۔ یوٹیلٹی کارپوریشن کو کارآمد بنا کر آٹا، دال، چاول، کوکنگ آئل اور دوسرا راشن سستا کیا جائے۔