شامی علاقے منبج میں امریکا کے ساتھ متحرّک ہوں گے،منبج میں فرانس کی فورسز کا کوئی وجود نہیں،ترک وزیر خارجہ

ہفتہ اپریل 22:45

انقرہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) ترک وزیر خارجہ مولود چاوش اوگلو کا کہنا ہے شامی علاقے منبج میں امریکا کے ساتھ متحرّک ہوں گے،منبج میں فرانس کی فورسز کا کوئی وجود نہیں۔ترک نشریاتی ادارے کے مطابق ترک وزیر خارجہ مولود چاوش اوگلو کا کہنا ہے کہ ترکی شام کے علاقے منبج میں امریکا کے ساتھ حرکت میں آئے گا۔

(جاری ہے)

انہوں نے یہ بات جمعے کے روز برسلز میں امریکا کے نئے وزیر خارجہ مائیک پومپیو کے ساتھ ملاقات کے بعد کہی۔

مائیک پومپیو اپنے نئے عہدے کا حلف اٹھانے کے صرف 12 گھنٹے بعد براہ راست نیٹو کے صدر دفتر روانہ ہو گئے تھے۔پومپیو سے ملاقات کے بعد اوگلو نے ترک ٹی وی چینلوں کو دیے گئے بیان میں بتایا کہ منبج میں فرانس کی فورسز کا کوئی وجود نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ترکی اپنے حلیفوں کی جانب سے پیٹریاٹ میزائل یا دیگر فضائی دفاعی نظاموں کی فراہمی کے حوالے سے "اچھی پیش کشوں" کا جائزہ لے سکتا ہے۔

متعلقہ عنوان :