پاک ، بھارت ڈی جی ایم اوز کا ہاٹ لائن پر رابطہ، فائر بندی معاہدے کی خلاف ورزی کا معاملہ اٹھایا ، آئی ایس پی آر

بھارت الزام تراشی کی بجائے اپنا قبلہ درست کرے ،دیر پا امن کیلئے ایل او سی ،ورکنگ بائونڈری پر سیز فائر معاہدوں کی پابندی کرے، بیان

ہفتہ اپریل 23:10

پاک ، بھارت ڈی جی ایم اوز کا ہاٹ لائن پر رابطہ، فائر بندی معاہدے کی خلاف ..
راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز (ڈی جی ایم او ))پاکستان نے شہری آبادی کو نشانہ بنانے کا معاملہ ڈی جی ایم او بھارت کیساتھ اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت الزام تراشی کی بجائے اپنا قبلہ درست کرے اور دیر پا امن کیلئے ایل او سی اور ورکنگ بائونڈری پر سیز فائر معاہدوں کی پابندی کرے۔

(جاری ہے)

ہفتہ کو آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پاکستان کے ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز نے بھارت کے ڈی جی ایم او کے ساتھ ہاٹ لائن پر رابطہ کیا اور فائر بندی معاہدے کی خلاف ورزی کا معاملہ اٹھایا۔

ڈی جی ایم او پاکستان نے شہری آبادی کو نشانہ بنانے کا معاملہ بھی اٹھایا۔ رواں سال اب تک بھارتی فائرنگ سے 219 معصوم شہری شہید ہو چکے ہیں، ان شہداء میں 112 خواتین اور 20 بجے شامل ہیں۔ ڈی جی ایم او پاکستان نے کہا کہ بھارت کے ایسے غیر پیشہ وارانہ اور غیر اخلاقی اقدامات امن کی راہ میں رکاوٹ ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بھارت الزام تراشی کی بجائے اپنا قبلہ درست کرے اور دیر پا امن کیلئے ایل او سی اور ورکنگ بائونڈری پر سیز فائر معاہدوں کی پابندی کرے۔