دو گروپوں میں مویشی کھیتوں میں جانے کے معاملے پر تصادم، 3 افراد جاں بحق، 5 زخمی

اتوار اپریل 01:50

لاڑکانہ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) لاڑکانہ کے قریب پیر شیر ایٹ عاقل تھانہ کے حد کچے کے علاقے گاؤں علی حسن جتوئی میں جتوئی برادری کے دو گروپوں میں مویشی کھیتوں میں جانے کے معاملے پر تصادم ہوگیا جس کے نتیجے میں دونوں گروپ کی جانب سے فائرنگ کی گئی اور نتیجے میں تین افراد جاں بحق جبکہ پانچ زخمی ہوگئے جن میں محمد پنجل، حاجن اور سکندر عرف کراڑو جتوئی شامل ہیں جبکہ تین سے زائد افراد بھی زخمی ہوئے۔

(جاری ہے)

. جاںبحق ہونے والوں کی لاشیں اور زخمیوں کو چانڈکا میڈیکل ہسپتال کے شعبہ حادثات پر منتقل کیا گیا جبکہ دونوں گروپوں کے درمیان مورچہ بند فائرنگ کا سلسلہ دو گھنٹوں تک جاری رہا جس کے بعد پولیس نے پہنچ کر لاشوں اور زخمیوں کو چانڈکا اسپتال شعبہ حادثات منتقل کیا جہاں زخمیوں کو طبی امداد دی گئی اور لاشوں کی پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کیا گیا۔ پولیس کے مطابق جتوئی برادری کے دونوں گروپوں میں کھیتوں میں مال مویشی جانے کی بات پر جھگڑا ہوا اور فائرنگ کے نتیجے میں تین افراد جان بحق اور پانچ افراد زخمی ہوئے ہے۔ دوسری جانب آخری اطلاع موصول ہونے تک واقعہ کا مقدمہ درج نہ ہوسکا اور نہ کوئی گرفتاری عمل نہ آسکی۔